ہوم » نیوز » عالمی منظر

جب وہائٹ ہاوس میں مچی بھگدڑ، ڈونالڈ ٹرمپ کو بھی بنکر میں چھپنا پڑا

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کے کنبہ کے اراکین کو وائٹ ہاؤس کے سامنے مظاہروں کے درمیان ایک گھنٹے کے لئے زیرزمین بنکر میں لے جایا گیا تھا۔ ٹرمپ اور ان کے کنبہ کے اراکین کو وائٹ ہاؤس کے سامنے مظاہروں کے درمیان ایک گھنٹے کے لئے زیر زمین بنکر میں لے جایا گیا تھا۔

  • Share this:
جب وہائٹ ہاوس میں مچی بھگدڑ، ڈونالڈ ٹرمپ کو بھی بنکر میں چھپنا پڑا
ڈونالڈ ٹرمپ کو بھی بنکر میں چھپنا پڑا

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کے کنبہ کے اراکین کو وائٹ ہاؤس کے سامنے مظاہروں کے درمیان ایک گھنٹے کے لئے زیرزمین بنکر میں لے جایا گیا تھا۔ یہ اطلاع وائٹ ہاؤس کے افسران نے میڈیا کو دی ہے۔ سی این این- نیوز 18 کی رپورٹ کے مطابق ڈونالڈ ٹرمپ اور ان کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ اور بیٹا برون کو جمعہ کے روز ایک زیرزمین بنکر میں تقریباًایک گھنٹہ تک رکھا گیا تھا۔ افریقی نژاد امریکی شہری جارج فلائیڈ کی پولیس تحویل میں موت ہوجانے کے خلاف احتجاج میں جمعہ کی علی الصبح مظاہرین کی بڑی تعداد وہائٹ ہاؤس کے سامنے جمع ہوگئی تھی اور ہفتہ کی رات تک وہیں موجود رہی۔مظاہرے کے دوران بھڑکے تشددمیں خفیہ سروس کے 60 سے زائد افسران اور ایجنٹ زخمی ہوئے ہیں۔


گزشتہ جمعہ کو بڑی تعداد میں مظاہرین وہائٹ ہاوس کے باہر جمع ہوگئے، جس کے بعد امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کو سیکورٹی کے پیش نظر بنکر میں لے جایا گیا۔ میڈیا میں آئی اطلاعات کے مطابق مظاہرین کی بھیڑ اچانک آجانے سے وہائٹ ہاوس میں بھگدڑ مچ گئی، جس کے بعد ڈونالڈ ٹرمپ کو بھی بنکر میں چھپانا پڑا تھا۔ رپورٹ کے مطابق وہائٹ ہاؤس کے ملازمین کو سیکیورٹی وجوہات کی بناء پر اتوارسے کام پرآنے سے باز رہنے کوکہا گیا تھا۔ دوسری جانب نیشنل گارڈز کی تعیناتی اور کرفیو کے نفاذ کے باوجود امریکہ کے مختلف شہروں میں احتجاج جاری ہے۔



ڈونالڈ ٹرمپ نے الزام لگایا کہ ڈیموکریٹ گورنر اپنے حامیوں کو وہائٹ ہاوس کے باہر جمع ہونے اور مشتعل احتجاج کرنے کے لئے اکسا رہے ہیں۔
ڈونالڈ ٹرمپ نے الزام لگایا کہ ڈیموکریٹ گورنر اپنے حامیوں کو وہائٹ ہاوس کے باہر جمع ہونے اور مشتعل احتجاج کرنے کے لئے اکسا رہے ہیں۔


آنسو گیس کے گولے داغے اور لاٹھیاں برسائیں

حالانکہ ہفتہ کے روز وہائٹ ہاوس کے باہر کافی احتیاط برتی گئی۔ ہفتہ کو بھی مظاہرین وہائٹ ہاوس کے باہر جمع ہوئے، لیکن پولیس نے کچھ ہی منٹوں کے بعد انہیں آنسو گیس کے گولے اور لاٹھی چارج کے ذریعہ ہٹا دیا۔ ڈونالڈ ٹرمپ نے الزام لگایا کہ ڈیموکریٹ گورنر اپنے حامیوں کو وہائٹ ہاوس کے باہر جمع ہونے اور مشتعل احتجاج کرنے کے لئے اکسا رہے ہیں۔ ہفتہ کو وہائٹ ہاوس کے باہر ڈونالڈ ٹرمپ کے حامی بھی پہنچ گئے تھے، جس کے بعد حالت مزید سنگین ہوگئی تھی۔ ٹرمپ نے اس حادثہ کے بعد کئی ٹوئٹ بھی کئے اور بتایا کہ کیسے سیکریٹ سروس نے وہائٹ ہاوس کو ایک قلعہ میں تبدیل کردیا ہے۔ ٹرمپ نے کہا کہ وہائٹ ہاوس کے باہر ہوئے لاٹھی چارج کی اجازت بھی واشنگٹن ڈی سی کے گورنر موریل باسر نے دی تھی۔

جی 7 کی میٹنگ بھی ہوئی منسوخ

دوسری جانب امریکہ نے کووڈ- 19 عالمی وبا کی وجہ سے اقتصادی بحران کے سلسلے میں غور کرنے کے لئے مجوزہ جی 7 کی میٹنگ ستمبر تک منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس کے بجائے روس، جنوبی کوریا، آسٹریلیا اور ہندوستان کے ساتھ میٹنگ کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ امریکی صدر کے دفتر وائٹ ہاؤس کے سرکاری ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ ان کے خیال میں جی 7 میں کووڈ 19 کی وجہ سے پیدا ہلچل کی صحیح طریقے سے نمائندگی نہیں کرتی ہے، اس لئے اس میٹنگ کو ستمبر تک کے لئے منسوخ کردیا ہے۔ اس کے بجائے ڈونالڈ ٹرمپ نے روس، جنوبی کوریا، آسٹریلیا اورہندوستان کو میٹنگ کےلئے مدعو کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ ذرائع کے مطابق امریکی صدر کی اس پہل کا مقصد امریکہ کے روایتی ساتھیوں کے ساتھ چین کے مستقبل کے برتاؤ کے ساتھ نمٹنے کے بارے میں بات کرنا ہے۔
First published: Jun 01, 2020 02:06 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading