உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سی آئی اے نے خشوگی کے قتل کے معاملے میں سعودی ولی عہد پر الزامات نہیں لگائے ہیں : ٹرمپ

    امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ:فائل فوٹو

    امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ:فائل فوٹو

    امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ مرکزی خفیہ ایجنسی (سی آئی اے) اپنی تفتیش میں اس نتیجہ پر نہیں پہنچی ہے کہ صحافی جمال خشوگی کا قتل سعودی عرب کے ولی عہد محمد بن سلمان کے حکم پر کیا گیا تھا۔

    • Share this:
      امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ مرکزی خفیہ ایجنسی (سی آئی اے) اپنی تفتیش میں اس نتیجہ پر نہیں پہنچی ہے کہ صحافی جمال خشوگی کا قتل سعودی عرب کے ولی عہد محمد بن سلمان کے حکم پر کیا گیا تھا۔ترکی کے استنبول شہر میں واقع سعودی قونصلیٹ میں 2 اکتوبر کو  جمال خشوگی کو قتل کردیا گیا تھا۔ بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق امریکی افسران نے مبینہ طور پر کہا تھا کہ اس طرح کا آپریشن ولی عہد کے حکم کے بغیر نہیں ہوسکتا ہے۔ سعودب عرب کا کہنا ہے کہ ’’کچھ برے لوگوں‘ نے مسٹر خاشقجی کو ہلا ک کردیا تھا۔
      ڈونالڈ ٹرمپ نے جمعرات کو فلوریڈا میں سی آئی اے کی رپورٹ پر پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ سی آئی اے نے اپنی جانچ میں ولی عہد پر الزام نہیں لگایا ہے۔ مسٹر ٹرمپ نے کہا کہ ’’سی آئی اے کی رپورٹ میرے پاس ہے۔
      تفتیشی ایجنسی اس نتیجہ پر نہیں پہنچی ہے کہ سعودی عرب کے ولی عہد خشوگی قتل کے ذمہ دار ہیں۔ مجھےنہیں معلوم ہے کہ سعودی عرب کے ولی عہد کو خشوگی کے قتل کے لئے کوئی ذمہ دار قرار دے پائے گا یا نہیں۔ بات یہ بھی ہے کہ وہ اس میں شامل تھے کہ نہیں لیکن وہ اور ان کے والد سلطان سلمان بن عبدالعزیز اس الزام کو یکسر مسترد کرتے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں
      ٹوٹ گیا ورا ٹ کوہلی کا یہ ارمان ! میلبورن ٹی 20 میں بارش نے پھیرا پانی
      افغانستان میں بم دھماکہ میں 12 فوجی ہلاک ، 33 زخمی
      پاکستان کے ہانگو میں دھماکہ ، 30ہلاک ، 40 زخمی
      First published: