உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Dubai-Bangalore Emirates A380: دنیا کےسب سےبڑےمسافرطیارےکےبارےمیں جانیے دلچسپ معلومات!

    کمپنی نے کچھ مخصوص مقامات کے درمیان نئی پریمیم اکانومی کلاس بھی شروع کی ہے۔

    کمپنی نے کچھ مخصوص مقامات کے درمیان نئی پریمیم اکانومی کلاس بھی شروع کی ہے۔

    ایمریٹس کے بیڑے میں اے 380 کے کل 118 یونٹس ہیں۔ جو کہ 1 بلین کلومیٹر سے زیادہ پرواز کی ہے اور 2018 سے اب تک 105 ملین سے زیادہ مسافر اس میں سفر کر چکے ہیں۔ اے 380 کی مختصر ترین پرواز دبئی اور جدہ، سعودی عرب کے درمیان سفر کرے گی جس کا فاصلہ 1,700 کلومیٹر ہے۔

    • Share this:
      ایمریٹس A380 (Emirates A380) کو انجینئرنگ کا کمال کہنا مبالغہ آرائی نہیں ہوگی۔ دنیا کا سب سے بڑا ہوائی جہاز ہونے کی وجہ سے اس میں تمام پرتعیش سہولیات موجود ہیں۔ اب ایمریٹس ایئر لائنز 30 اکتوبر 2022 سے اس طیارے کو دبئی-بنگلور روٹ (Dubai-Bengaluru route) پر تعینات کرے گی۔

      ایمریٹس ایئر لائنز اب تک بوئنگ 777 کے ذریعے دبئی اور بنگلورو کے درمیان کام کر رہی ہے۔ لہذا A380 کے بنگلورو کی سرزمین پر اترنے سے پہلے آئیے اس کی اسناد کے بارے میں بات کرتے ہیں جو اسے دنیا کا سب سے بڑا مسافر بردار طیارہ بناتا ہے۔ ایمریٹس A380 کا وزن 510 سے 575 ٹن کے درمیان ہے جبکہ یہ 2 نیلی وہیل (72.7 میٹر) اور لمبا 5 زرافے (24.1 میٹر) تک ہے۔ مزید یہ کہ یہ 4 ملین حصوں پر مشتمل ہے۔ اے 380 میں بوئنگ 777 کے مقابلے میں 45 فیصد زیادہ بیٹھنے کی گنجائش ہے جس میں اضافی لیگ روم اور تمام کیبنز میں سب سے بڑی اسکرینیں ہیں۔

      ایمریٹس کے بیڑے میں اے 380 کے کل 118 یونٹس ہیں۔ جو کہ 1 بلین کلومیٹر سے زیادہ پرواز کی ہے اور 2018 سے اب تک 105 ملین سے زیادہ مسافر اس میں سفر کر چکے ہیں۔ اے 380 کی مختصر ترین پرواز دبئی اور جدہ، سعودی عرب کے درمیان سفر کرے گی جس کا فاصلہ 1,700 کلومیٹر ہے جب کہ سب سے طویل پرواز دبئی، آکلینڈ اور نیوزی لینڈ کے درمیان ہے۔ جو کہ 14,193 کلومیٹر وسیع ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      لارین گوٹیب نے رلیشن شپ کو لیکر کیا بڑا انکشاف، بوائے فرینڈ کے ساتھ شیئر کی کس کرتی ہوئی تصاویر

      یہ بھی پڑھیں: 

      BJP پارلیمانی بورڈ میں بڑی تبدیلی، نتن گڈکری-شیوراج سنگھ چوہان کی چھٹی، ان نئے چہروں کو کیا گیا شامل

      فرسٹ کلاس میں پرائیویٹ سویٹس اور شاور سپا سے لے کر بزنس کلاس میں فلیٹ بیڈ سیٹوں تک اضافی کمرے، وائرلیس بلوٹوتھ کنیکٹیویٹی اور اکانومی کلاس میں کسٹم لائٹنگ ایمریٹس  اے 380 میں مسافروں کے لیے سب کچھ ہے۔ درحقیقت اس میں پورے سفر میں انفلائٹ وائی فائی بھی ہے۔ بزنس کلاس فلائیرز کے لیے  اے 380 میں ایک آن بورڈ لاؤنج بھی ہے۔ کمپنی نے کچھ مخصوص مقامات کے درمیان نئی پریمیم اکانومی کلاس بھی شروع کی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: