ہوم » نیوز » عالمی منظر

مصر کے تباہ شدہ طیارے کے مسافروں کی لاشیں برآمد

قاہرہ۔ مصری ائیر لائن کے تباہ ہونے والے مسافر ایئربس اے 320 طیارے کے بعض مسافروں کی لاشیں ، طیارے کا ملبہ اور مسافروں کا کچھ سامان الیگزینڈریا کے ساحل سے ملا ہے جس کے بعد اس بات کی تصدیق ہوگئی ہے کہ طیارہ حادثے کا شکار ہوکر سمندر میں گرا تھا۔

  • UNI
  • Last Updated: May 21, 2016 12:34 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
مصر کے تباہ شدہ طیارے کے مسافروں کی لاشیں برآمد
قاہرہ۔ مصری ائیر لائن کے تباہ ہونے والے مسافر ایئربس اے 320 طیارے کے بعض مسافروں کی لاشیں ، طیارے کا ملبہ اور مسافروں کا کچھ سامان الیگزینڈریا کے ساحل سے ملا ہے جس کے بعد اس بات کی تصدیق ہوگئی ہے کہ طیارہ حادثے کا شکار ہوکر سمندر میں گرا تھا۔

قاہرہ۔ مصری ائیر لائن کے تباہ ہونے والے مسافر ایئربس اے 320 طیارے کے بعض مسافروں کی لاشیں ، طیارے کا ملبہ اور مسافروں کا کچھ سامان الیگزینڈریا کے ساحل سے ملا ہے جس کے بعد اس بات کی تصدیق ہوگئی ہے کہ طیارہ حادثے کا شکار ہوکر سمندر میں گرا تھا۔ پیرس سے قاہرہ کے لئے جمعرات کی صبح پراوز کرنے کے بعد لاپتہ ہوئے طیارہ کے فلائٹ ڈاٹا کے مطابق تجربہ کار پائلٹ نے حادثہ سے پہلے چند منٹوں تک جدوجہد کی ۔ شہر ی پرواز کی وزارت نے ایک بیان میں کہا کہ مصر کی بحریہ کو مسافروں کا سامان، لاشیں، طیارہ کی سیٹیں اور ملبہ ملا ہے۔ صدر عبدالفتح السیسی نے متاثرین کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا ہے۔


الجزیرہ کی ایک رپورٹ میں مصر کی فوج کے حوالے سے بتایا گیا کہ فوجی ترجمان کے مطابق ملبہ الیگزینڈریا کے شمال میں تقریباً 290 کلومیٹر کے فاصلے سے ملا۔مذکورہ طیارہ میں عملے سمیت 66 افراد سوار تھے۔ ابھی تک طیارے کا بلیک باکس نہیں ملا ہے جس سے حادثہ کے اصل اسباب کا پتہ چل سکے۔ مصر کے وزیر اعظم شریف اسماعیل نے کہا کہ حادثہ کے لئے کسی بھی سبب کو مستر د کرنا ابھی جلد بازی ہوگی۔شہری ہوابازی کی وزارت کا کہنا ہے کہ حادثے کی وجہ دہشت گردی ہوسکتی ہے کیونکہ بظاہر اس طیارے میں کوئی تکنیکی نقص موجود نہیں تھا۔ حالانکہ اس حادثے کے 48گھنٹے سے زیادہ گذر جانے کے باوجود اب تک کسی دہشت گرد تنظیم نے اس کی ذمہ داری نہیں لی ہے۔


مصری ایئرلائن کے ٹوئٹر کے مطابق طیارہ مصری وقت کے مطابق رات 2 بجکر 45 منٹ پر مصر کی حدود میں 10 میل داخل ہونے کے بعد لاپتہ ہوا اور اس کا رابطہ ریڈار سے منقطع ہوگیا۔ ایئرلائن کا مزید کہنا تھا کہ جس وقت طیارہ لاپتہ ہوا، وہ 37 ہزار فٹ کی بلندی پر پرواز کر رہا تھا۔ مصر ایئر کے مطابق طیارے میں 15 فرانسیسی، 30 مصری، ایک برطانوی، 2 عراقی، ایک کویتی، ایک سعودی، ایک سوڈانی، ایک چاڈ کا شہری، ایک پرتگالی، ایک بیلجیئن، ایک الجیرین اور ایک کینیڈین شہری سوار تھا۔ گذشتہ برس 31 اکتوبر کو بھی روس کا ایئر بس اے۔321 طیارہ مصر کے شرم الشیخ ایئر پورٹ سے روسی دارالحکومت ماسکو جاتے ہوئے مصر میں گر کر تباہ ہو گیا تھا، جس میں 220 سے زائد افراد سوار تھے۔

First published: May 21, 2016 12:34 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading