உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Hajj 2022: مصری خاندان غلاف کعبہ کی تیاری میں سب سے آگے، صدیوں پرانی روایات کو زندہ رکھنے میں اہم کردار

    تصویر عرب نیوز

    تصویر عرب نیوز

    کسوا غلاف کعبہ کی ایک خاص اور نہایت ہی منفرد قسم ہے، جس کے تحت غلاف کعبہ کو معطر اور خوبصورت بنایا جاتا ہے۔ کالے ریشم کے بڑے کپڑے پر سونے کے دھاگوں سے اس کی تیاری کی جاتی ہے۔ ہر سال عثمان کے خاندان کو کسوا کی تیاری کا کام دیا جاتا ہے۔

    • Share this:
      مصر: چھت کے پنکھے کے نیچے احمد عثمان (Ahmed Othman) سیاہ کپڑے پر سنہری دھاگے بُنتے ہیں۔ وہ انتہائی مہارت سے قرآنی آیات لکھتے ہیں۔ غلام کعبہ کی تیاری میں وہ اپنے دادا کی مدد کرتے ہیں۔ جو کہ خانہ کعبہ کے غلاف کو مزید پرکشش اور خوبصورت بنانے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔

      کسوا غلاف کعبہ کی ایک خاص اور نہایت ہی منفرد قسم ہے، جس کے تحت غلاف کعبہ کو معطر اور خوبصورت بنایا جاتا ہے۔ کالے ریشم کے بڑے بڑے کپڑے پر سونے کے دھاگوں سے اس کی تیاری کی جاتی ہے۔ ہر سال عثمان کے خاندان کو کسوا کی تیاری کا کام دیا جاتا ہے، جو کہ پوری مہارت اور خاص انداز میں اس کو ہاتھوں سے تیار کرتے ہیں۔

      ان کے خاندان کی تخلیقات کو اونٹوں کے کارواں میں مغربی سعودی عرب سے مکہ مکرمہ کی طرف روانہ کیا جاتا ہے۔ اب عثمان وسطی قاہرہ کے بھولبلییا خان الخلیلی بازار کے قریب اس روایت کو زندہ رکھے ہوئے ہیں۔ جو کہ صدیوں پرانی روایت ہے۔

      یہ علاقہ تاریخی طور پر مصر کی روایتی دستکاری کا گھر ہے، لیکن کاریگروں کو بڑھتے ہوئے چیلنجوں کا سامنا ہے۔ یہاں کا سامان زیادہ تر درآمدی اور مہنگا ہو گیا ہے، خاص طور پر جب مصر میں معاشی پریشانیوں اور کرنسی کی قدر میں کمی کا مسئلہ پیدا ہوا تو اس کام پر بھی راست اثر پڑا۔ سیاہ اور بھورے رنگ کی چادریں آیات اور دعاؤں میں ڈھکی ہوئی ہیں، جن پر چاندی اور سونے کی نازک کڑھائی کی گئی ہے۔ جس کی ذمہ داری عثمان کے دادا کو 1924 میں سونپی گئی تھی۔ عثمان کے دادا عثمان عبدلحمید 1926 میں مکمل طور پر مصری کسوا کی نگرانی کرنے والے آخری شخص تھے۔

      یہ بھی پڑھیں: Hajj 2022: آب زم زم کی تقسیم کیلئےجدید ترین ٹکنالوجی کااستعمال، ایک دن میں 2 لاکھ سےزائدبوتلیں تیار

      واضح رہے کہ حج کے دوران احتیاطی تدابیر پر عمل درآمد کیا جارہا ہے۔ اس طرح سعودی عرب کی حکومت نے اس سال صرف 10 لاکھ عازمین حج کو ہی حج کرنے کی اجازت دی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: Hajj 2022: خیموں کے سب سے بڑے شہر منیٰ میں عازمین حج کا قیام، جمعہ کو مناسک حج کا دوسرا دن

      اس خاندان نے سابق صدور جمال عبدالناصر اور انور سادات سمیت مصری اور غیر ملکی معززین کے لیے ملٹری کپڑوں کی تیاری کا بھی کام کیا تھا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: