ہوم » نیوز » عالمی منظر

اردگان کاپوپ فرانسس سے اسرائیلی تشددکوختم کروانےکامطالبہ،عیسائیوں کوبھی متحرک ہونےکی دعوت

اردگان (Turkish President Recep Tayyip Erdogan) نے پوپ فرانسس (Pope Francis) کو بتایا کہ عالمی برادری کو اسرائیل کو اس کے ظلم کا سبق سکھانا چاہئے۔ جس کا وہ حقدار ہے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ وہ فلسطین پر جاری حملوں کے بارے میں اسرائیلی صدر سے بات کریں۔

  • Share this:
اردگان کاپوپ فرانسس سے اسرائیلی تشددکوختم کروانےکامطالبہ،عیسائیوں کوبھی متحرک ہونےکی دعوت
اردگان نے اس بات پر بھی زور دیا کہ پوپ فرانسس کے جاری پیغامات عیسائی دنیا اور بین الاقوامی برادری کو متحرک کرنے میں بہت اہمیت رکھتے ہیں۔

اردگان کے دفتر نے کہا کہ ترک صدر رجب طیب اردوان (Recep Tayyip Erdogan) نے پوپ فرانسس (Pope Francis ) سے کہا ہے کہ عالمی برادری کو فلسطینیوں پر اسرائیل کے وحشیانہ تشدد کے لئے اسرائیل پر پابندیاں عائد کرنے چاہئیں۔

اردگان (Turkish President Recep Tayyip Erdogan) نے پوپ فرانسس (Pope Francis) کو بتایا کہ عالمی برادری کو اسرائیل کو اس کے ظلم کا سبق سکھانا چاہئے۔ جس کا وہ حقدار ہے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ وہ فلسطین پر جاری حملوں کے بارے میں اسرائیلی صدر سے بات کریں۔ ترکی کے صدارتی دفتر سے جاری ایک بیان میں کہا کہ ’’اردگان نے اس وقت تک اس بات پر زور دیا کہ فلسطینیوں کو قتل عام کا نشانہ بنایا جاتا رہے گا جب تک کہ عالمی برادری اسرائیل کو پابندیوں کے ساتھ سزا نہیں دیتا ہے۔


غزہ میں اسرائیلی فضائی حملہ کے بعد ایک عمارت سے آگ کے شعلے اور دھنویں اٹھتے ہوئے ۔ (AP Photo/Hatem Moussa)
غزہ میں اسرائیلی فضائی حملہ کے بعد ایک عمارت سے آگ کے شعلے اور دھنویں اٹھتے ہوئے ۔ (AP Photo/Hatem Moussa)


اردگان نے اس بات پر بھی زور دیا کہ پوپ فرانسس کے جاری پیغامات عیسائی دنیا اور بین الاقوامی برادری کو متحرک کرنے میں بہت اہمیت رکھتے ہیں۔اردگان نے کہا کہ مسجد اقصیٰ (Al Aqsa Mosque) اور چرچ آف ہولی سلیپر (Church of the Holy Sepulcher) تک رسائی روکنے کے علاوہ، عبادت پر پابندی لگانے کے خلاف مشترکہ طور پر کوشش کی جائے۔ وہیں فلسطینی سرزمین میں بے گناہ شہریوں کی ہلاکت کو روکنے کے لیے سب مل کر آگے آہیں۔

انسانی وقار کی خلاف ورزی کرنے کے علاوہ انہوں نے مزید کہا کہ اسرائیل علاقائی سلامتی کو بھی خطرہ میں ڈال رہا ہے۔
اسرائیل میں گذشتہ ایک ہفتے کے دوران انتقامی راکٹوں 212 سے بھی زائد افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ترکی نے اس تشدد کی مذمت کرتے ہوئے اسرائیل پر "نسلی ، مذہبی اور ثقافتی دہشت گردی" کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔

پوپ فرانسس نے اتوار کے روز کہا تھا کہ تنازعہ سے بڑھتی ہوئی ہلاکتیں "ناقابل قبول ہیں۔
پوپ فرانسس نے اتوار کے روز کہا تھا کہ تنازعہ سے بڑھتی ہوئی ہلاکتیں "ناقابل قبول ہیں۔


پوپ فرانسس نے اتوار کے روز کہا تھا کہ تنازعہ سے بڑھتی ہوئی ہلاکتیں "ناقابل قبول ہیں۔انہوں نے کہا "آئیے ہم مسلسل دعا کریں کہ اسرائیلی اور فلسطینی مذاکرات اور جنگ بندی کا راستہ تلاش کریں۔ آئیے ہم متاثرین خصوصا بچوں کے لیے دعا کریں؛ آئیں امن کے لئے دعا کریں۔"
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 18, 2021 01:40 PM IST