ہوم » نیوز » عالمی منظر

کانگو میں نسلی تشدد، کم از کم 49 افراد ہلاک

گوما / ڈیموکریٹک جمہوریہ کانگو۔ وسطی افریقی ملک کانگو جمہوریہ کے صوبہ ایتري میں ہیما چرواہے اور لینڈو قبائل کے کسانوں کے درمیان نسلی تشدد میں کم از کم 49 لوگوں کی موت ہو گئی۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 03, 2018 10:51 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کانگو میں نسلی تشدد، کم از کم 49 افراد ہلاک
پولیس اہلکار کانگو میں ایک پک اپ گاڑی میں بیٹھے ہوئے: فائل فوٹو، رائٹرز

گوما / ڈیموکریٹک جمہوریہ کانگو۔ وسطی افریقی ملک کانگو جمہوریہ کے صوبہ ایتري میں ہیما چرواہے اور لینڈو قبائل کے کسانوں کے درمیان نسلی تشدد میں کم از کم 49 لوگوں کی موت ہو گئی۔ آج مقامی حکام نے اس قتل عام کے بار ے میں معلومات دی۔ اس ماہ میں نسلی تشدد کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔ 1998-2003 کی جنگ کے بعد سے دونوں گروپوں کے درمیان کشیدگی کافی کم ہو گئی تھی، لیکن حالیہ کچھ مہينوں میں زمین کو لے کر جاری تنازعہ کی وجہ سے دونوں گروپوں کے درمیان کشیدگی کافی بڑھ گئی ہے۔


فروری میں مسلح ہیما اور لینڈو قبائل کے درمیان تشدد میں کم از کم 30 لوگوں کی موت ہوئی ہے۔ قابل غور ہے کہ یوگنڈا اور روانڈا سے متصل مشرقی کانگو کے سرحدی علاقوں میں گزشتہ ایک سال کے دوران باغیانہ سرگرمیوں میں کافی اضافہ ہوا ہے۔ صدر جوزف کابیلہ نے دسمبر 2016 میں اپنی میعاد پوری ہونے کے بعد عہدہ سے ہٹنے سے انکار کر دیا تھا۔



First published: Mar 03, 2018 10:51 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading