உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    فرانس سمیت 15یوروپی ممالک نے اسرائیل سے کی اپیل،کہا-ویسٹ بینک میں نہ بنائے نئے گھر

    ویسٹ بینک میں اسرائیلی بستیوں کی تعمیر پر 15 ممالک کا اعتراض۔

    ویسٹ بینک میں اسرائیلی بستیوں کی تعمیر پر 15 ممالک کا اعتراض۔

    جمعے کو ترکی نے بھی غیر قانونی اسرائیلی بستیوں کو توسیع دینے کے منصوبے کی مذمت کی تھی۔ مشرقی یروشلم سمیت مغربی کنارے کو بین الاقوامی قانون کے تحت مقبوضہ علاقے کے طور پر دیکھا جاتا ہے، اس طرح وہاں تمام یہودی آباد کاری کو غیر قانونی قرار دیا جاتا ہے۔

    • Share this:
      ویسٹ بینک: فرانس سمیت 15 یورپی ممالک نے اسرائیل پر زور دیا ہے کہ وہ مغربی کنارے میں مزید غیر قانونی بستیوں کی تعمیر کے منصوبے کو روک دے۔ فرانس، جرمنی اور اٹلی سمیت 15 یورپی ممالک نے جمعہ کے روز کہا کہ اسرائیل کو مغربی کنارے کے علاقے میں 4000 سے زائد نئے ہاؤسنگ یونٹس بنانے کے پروگرام کو منجمد کر دینا چاہیے۔ بتادیں کہ فرانس کی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق یہ اطلاع موصول ہوئی ہے۔ اس بیان پر درجنوں دیگر یورپی ممالک نے بھی دستخط کیے ہیں۔

      چند روز قبل اسرائیلی حکام نے کہا تھا کہ وہ مغربی کنارے میں 4000 نئے ہاؤسنگ یونٹس کی منظوری دیں گے۔ بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ہم اسرائیلی حکام پر زور دیتے ہیں کہ وہ یہ فیصلہ واپس لے لیں۔

      بین الاقوامی قوانین کی ہورہی ہے خلاف ورزی
      بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اسرائیل کی طرف سے تعمیر کی جا رہی نئی بستیاں بین الاقوامی قوانین کی صریحاً خلاف ورزی ہیں۔ اسرائیل کے اس اقدام سے دونوں خطوں، (اسرائیلی اور فلسطینیوں) کے درمیان بڑھتی ہوئی خلیج میں اضافہ ہوگا۔

      یوروپین یونین نے کی ہے مذمت
      یوروپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ جوزپ بوریل نے ایک بیان میں کہا: "یورپی یونین اسرائیلی حکام کی طرف سے مقبوضہ مغربی کنارے میں غیر قانونی بستیوں کو توسیع دینے کے منصوبے کی منظوری کی مذمت کرتی ہے، جس سے 4,400 سے زیادہ ہاؤسنگ یونٹس کو منتقل کیا جائے گا۔"

      یہ بھی پڑھیں:
      Free Press: الجزیرہ سے وابستہ سینئر صحافی کا اسرائیلی فورسز کے ہاتھوں قتل، جانیے تفصیل

      یہ بھی پڑھیں:
      Russia attack Finland:ناٹو کی رکنیت کو لے کر کیوں متحرک ہے فن لینڈ؟کیا ہے ماہرین کی رائے؟

      ترکی نے بھی کی مذمت
      اس سے قبل جمعے کو ترکی نے بھی غیر قانونی اسرائیلی بستیوں کو توسیع دینے کے منصوبے کی مذمت کی تھی۔ مشرقی یروشلم سمیت مغربی کنارے کو بین الاقوامی قانون کے تحت مقبوضہ علاقے کے طور پر دیکھا جاتا ہے، اس طرح وہاں تمام یہودی آباد کاری کو غیر قانونی قرار دیا جاتا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: