உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    European Union Membership:یوکرین اور مالدووا کوEUمیں شامل کرنے پر ہوا اتفاق

    یوروپی یونین کی کارگزار سربراہ نے یوکرین اور مالدووا کو لے کر کیا بڑا اعلان۔

    یوروپی یونین کی کارگزار سربراہ نے یوکرین اور مالدووا کو لے کر کیا بڑا اعلان۔

    European Union Membership: یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے ٹویٹ کرتے ہوئے لی این اور یورپی یونین کے تمام رکن ممالک کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا، یورپی یونین کی رکنیت کی پہلی سیڑھی پر پہنچ کر محسوس ہوتا ہے کہ ہماری جیت قریب ہے۔

    • Share this:
      European Union Membership:برسلز: یورپی یونین (Eropean Union) کے رکن ممالک نے جمعہ کو یوکرین اور مالدووا کی رکنیت پر رضامندی دے دی ہے۔ صرف ساڑھے تین ماہ میں کیے جانے والے اس معاہدے کو روسی حملے کے خلاف پیدا ہونے والے ماحول کا غیر متوقع اثر سمجھا جا رہا ہے۔ یورپی یونین کے آئین کے مطابق ایک نئے ملک کو شامل کرنے کے لیے تمام رکن ممالک کا متفق ہونا ضروری ہے۔ روسی حملے کے چار دن بعد 24 فروری کو یوکرین نے یورپی یونین میں رکنیت کے لیے درخواست دی تھی۔ چار دن بعد سابق سوویت ممالک مالدووا اور جارجیا نے یورپی یونین کی رکنیت کے لیے درخواست دی تھی۔

      جانیے EU کے کارگزار سربراہ نے کیا کہا؟
      ای یو 27 یورپی ممالک کی ایک طاقتور تنظیم ہے، جو یورو کرنسی میں تجارت کرتی ہے۔ ’یوکرین نے واضح طور پر یورپی روایات پر قائم رہنے کی اپنی مضبوط خواہش کا مظاہرہ کیا ہے،‘ یورپی یونین کے ہیڈکوارٹر میں یوکرین کی رکنیت کے معاہدے کا اعلان کرتے ہوئے، یورپی یونین کی قائم مقام سربراہ مملکت ارسلا وان ڈیر لی این نے یوکرین کے قومی پرچم سے مماثل نیلی قمیض اور پیلے رنگ کا بلیزر پہن رکھا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Poor Condition in Afghanistan:سب سے بدترین انسانی بحران سے گزر رہا افغانستان:ریڈکراس

      یہ بھی پڑھیں:
      Pakistan in Grey List:ابھی FATFکی’گرے لسٹ‘ میں ہی رہے گا پاکستان

      جارجیا کی رکنیت کے بارے میں پوچھے جانے پر، لی این نے کہا کہ اس کی درخواست مضبوط ہے، لیکن اسے اب بھی سیاسی طور پر یورپ کے قریب جانے کی ضرورت ہے۔ کچھ تبدیلیاں کرنے کی ضرورت ہے۔ اس کے جواب میں، یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے ٹویٹ کرتے ہوئے لی این اور یورپی یونین کے تمام رکن ممالک کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا، یورپی یونین کی رکنیت کی پہلی سیڑھی پر پہنچ کر محسوس ہوتا ہے کہ ہماری جیت قریب ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: