உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Exclusive: سری لنکا میں حکومت سازی کے بعد ہندوستان اور چین سےکیسےہوں گےتعلقات؟

    یوآن وانگ 5 ایک دوہری استعمال کا جاسوسی جہاز ہے

    یوآن وانگ 5 ایک دوہری استعمال کا جاسوسی جہاز ہے

    ہندوستانی حکومت کے ذرائع نے سری لنکا کے اس اقدام کا خیرمقدم کیا ہے اور کہا ہے کہ چین کو دوسرے ممالک کی خودمختاری کا احترام کرنا چاہیے۔ سی این این نیوز 18نے پہلے اطلاع دی تھی کہ اس بات کا قوی امکان ہے کہ یہ جہاز ہندوستانی علاقے میں گہرائی تک جھانکنے جدید آلات سے لیس ہو سکتا ہے۔

    • Share this:
      سری لنکا (Sri Lanka) نے چین (China) سے درخواست کی ہے کہ وہ اپنے جاسوس جہاز یوآن وانگ 5 (Yuan Wang 5) کی آمد کو موخر کر دے جب کہ ہندوستان کی جانب سے اس کے اصل مقصد پر تشویش کا اظہار کیا گیا ہے۔

      واضح رہے کہ یوآن وانگ 5 ایک دوہری استعمال کا جاسوسی جہاز ہے، جو خلا اور سیٹلائٹ سے باخبر رہنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے اور بین البراعظمی بیلسٹک میزائل لانچوں میں مخصوص استعمال کے ساتھ۔ یہ یوآن وانگ سیریز کا ایک تیسری نسل کا ٹریکنگ جہاز ہے، جو 29 ستمبر 2007 سے استعمال کیا گیا۔ اسے چین کے 708 ریسرچ انسٹی ٹیوٹ نے ڈیزائن کیا تھا۔

      یہ میزائلوں اور راکٹوں کی لانچنگ اور ٹریکنگ میں معاونت کے لیے ٹاپ آف دی لائن انٹینا اور الیکٹرانک آلات کے ساتھ ایک انتہائی جدید ترین میزائل رینج کا آلہ کار جہاز ہے۔ زیربحث جہاز کو 11 اگست کو ہمبنٹوٹا بندرگاہ (Hambantota Port) پر لایا جائے گا اور 17 اگست تک وہیں رہے گا۔ اس قیام کے دوران سری لنکا کو ایندھن اور دیگر سامان کی درخواست موصول ہوگی۔

      دستیاب انٹیلی جنس کے مطابق اس قیام کے بعد یوآن وانگ 5 دیگر تحقیق جیسے خلائی ٹریکنگ اور سیٹلائٹ آپریشن کی نگرانی کے لیے بحر ہند میں چلا جائے گا۔ سی این این نیوز 18 کے ذریعے حاصل کردہ ایک خط میں سری لنکا کے حکام نے جہاز کی آمد کو مزید مشاورت تک موخر کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

      ہندوستانی حکومت کے ذرائع نے سری لنکا کے اس اقدام کا خیرمقدم کیا ہے اور کہا ہے کہ چین کو دوسرے ممالک کی خودمختاری کا احترام کرنا چاہیے۔ سی این این نیوز 18نے پہلے اطلاع دی تھی کہ اس بات کا قوی امکان ہے کہ یہ جہاز ہندوستانی علاقے میں گہرائی تک جھانکنے جدید آلات سے لیس ہو سکتا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      آزادی کے 75 سال کے موقع پر خلا میں بھی لہرائے گا ترنگا، ISRO کی جانب سے ہوگی پیش رفت

      انہوں نے مزید کہا کہ مشرقی ساحل پر ہندوستانی بحریہ کے اڈے اور چاندی پور میں اسرو (ISRO) لانچ اسٹیشن سبھی اس طرح کے جہاز کی موجودگی میں خطرے سے دوچار ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:

      دنیا میں کتنے ہیں چار مینار؟، صرف یہاں دیکھیں دکنی زبان میں مختلف خبریں

      ذرائع کے مطابق چین نے سری لنکا کے معاشی بحران سے فائدہ اٹھانے کے لیے اس سرگرمی کو انجام دینے کی کوشش کی ہے۔ تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ لنکا کی بندرگاہیں چینی بحری اڈے بن جائیں جو بعد میں پی ایل او کے ذریعے استعمال کی جا سکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ چینی اس وقت لنکن لوگوں پر دباو ڈال رہی ہے کہ وہ ہندوستان کی جاسوسی کریں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: