உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    EXCLUSIVE: افغانستان حکومت کا سربراہ 'اپنے آدمی' کو بنانا چاہتی ہے آئی ایس آئی

    EXCLUSIVE: افغانستان حکومت کا سربراہ 'اپنے آدمی' کو بنانا چاہتی ہے آئی ایس آئی

    EXCLUSIVE: افغانستان حکومت کا سربراہ 'اپنے آدمی' کو بنانا چاہتی ہے آئی ایس آئی

    سی این این - نیوز 18 کو ذرائع سے ملی معلومات کے مطابق پاکستانی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی اس وقت 'اپنے آدمی' کو افغانستان کی حکومت کا سربراہ بنانے کے لیے اوور ٹائم کام کر رہی ہے۔ آئی ایس آئی کے سربراہ فیض حمید نے ہفتے کے روز کابل کا دورہ کیا اور طالبان قیادت سے ملاقات کی تھی ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی 'اپنے شخص' کو افغانستان میں حکومت کا سربراہ بنانا چاہتی ہے ۔ سی این این ۔ نیوز 18 کو ذرائع سے ملی معلومات کے مطابق پاکستانی خفیہ ایجنسی اس وقت اپنے آدمی کو افغانستان کی حکومت کا سربراہ بنانے کے لیے اوور ٹائم کام کر رہی ہے۔ آئی ایس آئی کے سربراہ فیض حمید نے ہفتے کے روز کابل کا دورہ کیا اور طالبان قیادت سے ملاقات کی تھی ۔ طالبان جلد اپنی حکومت کا اعلان کر سکتے ہیں ۔

      پاکستان افغانستان میں اپنی فوج کی مضبوط موجودگی بھی چاہتا ہے۔ پاکستان چاہتا ہے کہ افغان فوج کو دوبارہ تشکیل دیا جائے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایس آئی کے سربراہ کا دورہ کابل اسی کو لے کر تھا ۔ ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ پاکستان نے طالبان کی اس شرط پر مدد کی تھی کہ وہ افغانستان میں اپنی پسند کی فوج بنائے گا۔

      ذرائع کے مطابق پاکستان کو اپنی پسند کی فوج صرف حقانی کے ساتھ مل سکتی ہے۔ کابل میں آئی ایس آئی کے سربراہ نے حامد کرزئی ، عبداللہ عبداللہ اور گلبدین حکمت یار سے ملاقات کی تھی ۔ پاکستان یہ بھی چاہتا ہے کہ کرزئی اور عبداللہ کو طالبان کی طرف سے نئی حکومت میں شامل کیا جائے ، جس سے حکومت کو عالمی سطح پر کچھ قانونی جواز مل سکے ۔ حامد کرزئی افغانستان کے سابق صدر ہیں جبکہ عبداللہ عبداللہ ملک کے سابق چیف ایگزیکٹو افسر ہیں ۔ گلبدین حکمت یار ملک کے سابق وزیراعظم ہیں ۔

      ذرائع کے مطابق فیض حمید کا دورہ کابل بنیادی طور پر تین امور پر مرکوز تھا ۔ پہلا پاکستان کے ماتحت افغانستان کی نئی فوج کی تشکیل ، دوسرا کرزئی اور عبداللہ سے ملاقات ، تیسرا طالبان اور حقانی نیٹ ورک کے درمیان اختلافات کو حل کرنا۔ بتادیں کہ آئی ایس آئی کو حقانی نیٹ ورک کا سرپرست سمجھا جاتا ہے۔ حقانی نیٹ ورک کو اقوام متحدہ اور امریکہ نے دہشت گرد تنظیم قرار دیا ہے۔

      ( پوری خبر یہاں کلک کرکے پڑھی جاسکتی ہے )
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: