உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایف اے ٹی ایف FATF کیا ہے؟ کیوں یہ ملکوں کو اپنی ’’گرے لسٹ‘‘ میں شامل کرتا ہے؟

    ایف اے ٹی ایف FATF کیا ہے؟

    ایف اے ٹی ایف FATF کیا ہے؟

    عالمی مالیاتی نظام کی حفاظت کے لیے ترقی یافتہ معیشتوں کے جی 7 گروپ کی جانب سے قائم کردہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس FATF ایک عالمی نگران ادارہ ہے، جو منی لانڈرنگ سے نمٹنے کے لیے قائم کیا گیا ہے، یہ دہشت گردی کے خلاف موثر طور پر کام کرتا ہے۔

    • Share this:
      عالمی مالیاتی نظام Global Financial System کی حفاظت کے لیے ترقی یافتہ معیشتوں کے جی 7 گروپ کی جانب سے قائم کردہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (FATF | ایف اے ٹی ایف)  ایک عالمی نگران ادارہ ہے، جو ابتدا میں منی لانڈرنگ (money laundering) سے نمٹنے کے لیے قائم کیا گیا تھا لیکن 9/11 کے دہشت گرد حملوں کے بعد اس کا کردار نمایاں ہو گیا ہے۔ ان حملوں کے بعد ایف اے ٹی ایف نے اپنی کارروائیوں کو بڑھایا اور اس کے دائرہ کار میں دہشت گردی کی مالی معاونت پر تحقیقات بھی شامل ہے۔

      سنہ 2003 میں ایف اے ٹی ایف نے ہدایات کا ایک نیا مجموعہ سامنے جاری کیا، جہاں اس نے ملکوں سے غیر قانونی لین دین کی آمدنی ضبط کرنے، مشکوک ٹرانزیکشن رپورٹس وصول کرنے اور ان کی تحقیقات کے لیے مالیاتی انٹیلی جنس یونٹ بنانے پر زور دیا۔ اس کی سفارشات کو 'ہم مرتبہ جائزے' peer reviews یا 'باہمی تشخیص' mutual evaluations کے ذریعے مانیٹر کیا جاتا ہے۔

      سنہ 1991 اور 1992 کے دوران ایف اے ٹی ایف نے اپنی رکنیت کو 16 سے بڑھا کر 28 کر دیا۔ 2000 میں ایف اے ٹی ایف نے اسے 31 اراکین تک بڑھایا اور اس کے بعد اسے مزید 39 کر دیا۔

      ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ FATF's grey list:

      ایف اے ٹی ایف دو فہرستیں رکھتا ہے۔ ایک بلیک لسٹ اور دوسرا گرے لسٹ۔ اس کی بلیک لسٹ میں شامل ممالک وہ ہیں جن پر واچ ڈاگ منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کا الزام ہوتا ہے ، وہ ممالک اس کو روکنے کے لیے عالمی کوششوں میں تعاون نہیں کرتے ہیں۔

      دوسری جانب گرے لسٹ کو سرکاری طور پر 'بڑھتی ہوئی مانیٹرنگ کے تحت دائرہ اختیار' Jurisdictions Under Increased Monitoring کہا جاتا ہے، وہ قومیں تشکیل دیتی ہیں جو منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کے اہم خطرات پیش کرتی ہیں لیکن جو ایف اے ٹی ایف کے ساتھ مل کر کام کرنے کا عزم رکھتی ہیں۔ اس کے بعد ایک ایکشن پلان تیار کیا جاتا ہے ، جو اس کمی کو دور کرتا ہے۔

      ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ ایسے ممالک کو تشکیل دیتی ہے جنہیں دہشت گردی کی فنڈنگ ​​اور منی لانڈرنگ کے لیے محفوظ پناہ گاہ سمجھا جاتا ہے۔ اگرچہ فہرست میں شمولیت بلیک لسٹ ہونے کی طرح شدید نہیں ہے۔ یہ ملک کے لیے مسائل سے نمٹنے کے لیے ایک انتباہ ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: