ہوم » نیوز » عالمی منظر

Ban Child Spanking: اب شرارتی بچوں کو تھپڑ نہیں مار پائیں گے والدین، پکڑے گئے تو ہوگی سیدھے جیل

اگر ان ممالک میں آپ بچے کو مارتے ہوئے پکڑے گئے تو آپ کو سیدھے جیل کی ہوا کھانی پڑے گی۔ اس میں یوروپ کے کئی ملک شامل ہیں۔

  • Share this:
Ban Child Spanking: اب شرارتی بچوں کو تھپڑ نہیں مار پائیں گے والدین، پکڑے گئے تو ہوگی سیدھے جیل
اگر ان ممالک میں آپ بچے کو مارتے ہوئے پکڑے گئے تو آپ کو سیدھے جیل کی ہوا کھانی پڑے گی۔ اس میں یوروپ کے کئی ملک شامل ہیں۔

ہندستان میں اکثر لوگوں کے منھ سنا جاتا ہے کہ جو کام بچوں سے بڑی۔بڑی دھمکیاں نہیں کروا پاتیں وہ ماں باپ کے تھپڑ سے ہو جاتا ہے۔ بچوں کی بدمعاشیوں پر لگام لگانے کیلئے والدین کو کبھی کبھی مار (Physical Force) کا سہارا لینا پڑتا ہے لیکن دنیا میں ایسے کئی ملک ہیں جہاں بچوں پر ہاتھ اٹھانا غیرقانونی (Illegal) ہے۔ اگر ان ممالک میں آپ بچے کو مارتے ہوئے پکڑے گئے تو آپ کو سیدھے جیل کی ہوا کھانی پڑے گی۔ اس میں یوروپ کے کئی ملک شامل ہیں۔


بچوں کے اوپر ہاتھ اٹھانے پر غیر قانونی قرار دینے کی اپیل 


اب یوکے کے ایکسپرٹ نے ملک سے بچوں کے اوپر ہاتھ اٹھانے کو غیر قانونی قرار دینے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بچوں کو مارنے سے کوئی سھدار نہیں ہوتا۔ الٹے ان کے رویے میں اور زیادہ چڑچڑا پن اور تشدد پیدا ہو جاتا ہے۔ اس بات کی نتائج بھی ملے ہیں۔ ابھی انگلینڈ سمیت چار دیگر یوروپی ممالک میں بچوں پر ہاتھ اٹھانا قانونی ہے۔ ایسے میں ایکسپرٹ نے اس پر روک لگانے کی اپیل کی ہے۔ حالانکہ اس پلان پر ابھی کافی بحث ہونا باقی ہے۔


ان 4 ممالک میں اٹھی مانگ
یورپ کے زیادہ ممالک میں والدین اپنے بچوں پر ہاتھ نہیں اٹھا سکتے ہیں لیکن انگلینڈ میں کچھ مخصوص حالات میں بچوں کو سزا دینے کی اجازت ہے۔ اس کے علاوہ اسکاٹ لینڈ میں 16 سالہ بچوں کو سزا دینے کے لئے قانون بنائے گئے ہیں اور ویلز میں بھی اس طرح کے کچھ قوانین کو نافذ کرنے کے لئے کام جاری ہے۔ ماہرین کے مطابق حکومت کو اس پر سختی سے پابندی لگانی چاہئے۔ یونیورسٹی کالج لندن کے مطابق مارنے سے بچوں پر کوئی اچھا اثر نہیں پڑتا۔ اس کے برعکس ، بچے زیادہ جارحانہ ہوجاتے ہیں۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jun 29, 2021 10:46 AM IST