گیانا کے صدر-نائب صدر سے وزیر خارجہ ایس جے شنکر کی ملاقات، زراعت، دفاعی تعاون پر کیا تبادلہ خیال

گیانا کے صدر-نائب صدر سے وزیر خارجہ ایس جے شنکر کی ملاقات، زراعت، دفاعی تعاون پر کیا تبادلہ خیال

گیانا کے صدر-نائب صدر سے وزیر خارجہ ایس جے شنکر کی ملاقات، زراعت، دفاعی تعاون پر کیا تبادلہ خیال

جئے شنکر نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ گیانا کے صدر عرفان علی اور نائب صدر بھرت جگدیو سے اسٹیٹ ہاوس میں ملاقات کرکے خوشی ہوئی۔

  • News18 Urdu
  • Last Updated :
  • Guyana
  • Share this:
    وزیر خارجہ ایس جئے شنکر نے گیانا کے صدر عرفان علی اور نائب صدر بھرت جگدیو سے ملاقات کی اور انہیں وزیراعظم نریندر مودی کا پیغام دیا۔ انہوں نے گیانا کے اپنے ہم منصب ہیو ٹاڈ کے ساتھ پانچویں ہند-گیانا مشترکہ کمیٹی میٹنگ کی معاون صدارت بھی کی۔ اس میٹنگ میں زرعت، دفاعی تعاون اور بنیادی ڈھانچہ کی ترقی جیسے موضوعات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

    جئے شنکر نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ گیانا کے صدر عرفان علی اور نائب صدر بھرت جگدیو سے اسٹیٹ ہاوس میں ملاقات کرکے خوشی ہوئی۔ جے شنکر نے گیانا کے صدر اور نائب صدر کے ساتھ مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے ایک اور ٹویٹ میں کہا کہ انہوں نے زراعت، تجارت اور سرمایہ کاری، صحت اور فارما، توانائی سمیت قابل تجدید ذرائع، دفاع، اختراعات اور ٹیکنالوجی، سیاحت اور ترقیاتی شراکت داری میں اقدامات پر تبادلہ خیال کیا۔


    یہ بھی پڑھیں:

    ستمبر میں ہندوستان کا دورہ کرسکتے ہیں امریکی صدر بائیڈن، لو نے کہا-’ہند-امریکہ کے لیے ’بڑا‘سال ہوگا 2024‘

    وزیرخارجہ کا مزید کہا کہ اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ کاروباری رابطوں سمیت گہرے رابطوں کے ذریعے مواقع کو زیادہ مؤثر طریقے سے تلاش کیا جانا چاہیے۔ صدر علی نے وزیر خارجہ ایس جے شنکر کو کرکٹ بیٹ اور ان کے نام کی جرسی بھی پیش کی۔

    یہ بھی پڑھیں:

    سوڈان میں عید کے پیش نظر جنگ بندی کی اپیل، خرطوم میں لڑائی اب بھی جاری، 300 سے زائد افراد ہلاک

    قبل ازیں، ایس جے شنکر نے ٹرینیڈاڈ اور ٹوباگو، سینٹ کٹس اینڈ نیوس، سینٹ ونسنٹ اور گریناڈائنز، گریناڈا اور بارباڈوس کے ہم منصبوں کے ساتھ جمعہ کو الگ الگ دو طرفہ میٹنگ کی۔ دو طرفہ میٹنگوں کے دوران، وزیر جے شنکر نے تعاون، تجارت، موسمیاتی تبدیلی، ڈیجیٹل تبدیلی، ہیلتھ ڈومین، زراعت اور بین الاقوامی شمسی اتحاد (ISA) کی توسیع سمیت مختلف امور پر بات کی۔
    Published by:Shaik Khaleel Farhaad
    First published: