ہندوستان کی اپنے پاک مشن اسٹاف کے بچوں کو مقامی اسکولوں میں نہ بھیجنے کی صلاح

وزارت خارجہ نے پاکستان میں واقع ہندوستانی سفارت خانے میں رہ رہے اپنے افسروں کے لئے ایک ایڈوائزری جاری کی ہے۔ اس کے تحت حکام سے کہا گیا ہے کہ وہ افسر جن کے بچے پاکستان میں پڑھتے ہیں، وہ ان کی اسکول کی تعلیم پاکستان سے باہر کرائیں۔

Jul 25, 2016 06:45 PM IST | Updated on: Jul 25, 2016 07:32 PM IST
ہندوستان کی اپنے پاک مشن اسٹاف کے بچوں کو مقامی اسکولوں میں نہ بھیجنے کی صلاح

فائل فوٹو: رائٹرز

نئی دہلی۔  پاکستان کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کی سطح میں مزید کمی کی طرف اشارہ کرنے والی ایک صلاح میں ہندستان نے اپنے اسلام آباد ہائی کمیشن کے اسٹاف سے کہا ہے کہ وہ مقامی اسکولوں میں بچوں کو نہ بھیجیں۔ یہ صلاح خالصتاً سلامتی کے پیش نظر دی گئی ہے ۔ یو این آئی کو یہ اطلاع سرکاری ذرائع نے دی ہے۔

سفارتی زبان میں، ہندستان کی جانب سے اس اقدام کی یوں تشریح کی جارہی ہے کہ پاکستان کو ایک ’’ نن اسکول گوئنگ مشن‘‘ قرارد یا جارہا ہے ۔ سیکورٹی کے لحاظ سے یہ عمل کسی ملک کو درجہ بندی میں نیچے لانا ہے۔ اسکول ابھی گرمیوں کی چھٹیوں کی وجہ سے بند ہیں۔ اسلام آباد میں کام کرنے والے زائد از 50 ہندستانیوں کے بچے تعلیم جاری رکھنے کے لئے ہندستان لوٹیں گے۔

اسلام آباد میں ہندستانی ہائی کمیشن کے ذمہ داران اپنے اسٹاف کو صرف دو اسکولوں میں اپنے بچوں کو داخل کرنے کی اجازت دیتے ہیں ۔ ان میں ایک کا نام انٹرنیشنل اسکول آف اسلام آباد ہے جسے امریکن اسکول بھی کہا جاتا ہے اور دوسرے کا نام روٹس انٹر نیشنل اسکول ہے۔

Loading...

Loading...