உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Facebook-TikTok: فیس بک نے ٹک ٹاک کا مقابلہ کرنے کیلئے کی پہل، اب سے یہ سہولت ہوگی فراہم

    فیس بک

    فیس بک

    زکربرگ نے کہا ہے کہ اس میں سرمایہ کاری کرنا اور یہ معلوم کرنا کہ اس سے ملتی جلتی پروڈکٹ ریلز سے زیادہ پیسہ کیسے کمایا جائے، کمپنی کی اولین ترجیح ہے۔ زکربرگ نے اس سال سرمایہ کاروں کے ساتھ ایک اجلاس کے دوران کہا کہ لوگوں کے پاس بہت سے انتخاب ہیں کہ وہ اپنا وقت کیسے گزارنا چاہتے ہیں۔

    • Share this:
      فیس بک (Facebook) نے جمعرات کو اعلان کیا کہ وہ ٹک ٹاک (TikTok) کی جانب سے مقابلے کے لیے تیار ہے۔ ٹک ٹاک اپنے صارفین کی توجہ کے لیے کوشاں ہے، اس کے برخلاف فیس بک تخلیق کاروں کے مواد (ٹکسٹ، ویڈیو) کو صارفین کے دوستوں اور اہل خانہ کے ساتھ فلیگ شپ سوشل نیٹ ورک کے ڈیزائن کو تبدیل کر رہا ہے۔ اس کے معنی یہ ہے کہ اب پوسٹوں کو زیادہ سے زیادہ لوگ ان پوسٹوں کو دیکھ پائیں گے۔

      ایک بیان میں فیس بک نے کہا کہ صارفین کی ڈیفالٹ اسکرین کے ذریعہ تخلیق کاروں کی مدد کی جائے گی۔ اس کے علاوہ مزید تفریحی پوسٹس دکھائی جائے گی۔ جسے ہوم کے نام سے جانا جاتا ہے اور اس کی مختصر شکل کی ویڈیو سروس تک آسان رسائی فراہم کرے گی جسے Reels کے نام سے جانا جاتا ہے اور ساتھ ہی اس کے مختصر ویڈیو پروڈکٹ کو اسٹوریز کے نام سے جانا جاتا ہے۔

      وہ صارفین جو دوستوں، خاندان اور پسندیدہ پیجز اور گروپس کی تازہ ترین پوسٹس دیکھنا چاہتے ہیں انہیں ایک نئے "فیڈز" ٹیب پر ملیں گے۔ صارفین ان لوگوں اور گروپوں کی پسندیدہ فہرست بنا سکیں گے جن سے وہ سب سے زیادہ مواد دیکھنا چاہتے ہیں۔

      فیس بک کے چیف ایگزیکٹیو مارک زکربرگ (Mark Zuckerberg) نے ایک پوسٹ میں کہا کہ ایپ ہوم ٹیب پر ایک پرسنلائزڈ فیڈ کے لیے اب بھی کھلے گی، جہاں ہمارا انجن اس مواد کو تجویز کرے گا جس کے بارے میں ہمارے خیال میں آپ کو سب سے زیادہ دیکھنے کی خواہش یا ضرورت ہوگی۔ لیکن فیڈز ٹیب آپ کو اپنے تجربے کو مزید حسب ضرورت بنانے اور کنٹرول کرنے کا ایک طریقہ فراہم کرے گا۔

      فیس بک نے پچھلے سال اپنا نام تبدیل کر کے میٹا رکھا ہے۔ اب وہ نوجوان صارفین کے لیے ByteDance کی ویڈیو شیئرنگ ایپ، ٹک ٹاک کے مقابلے میں مقابلہ کرنے کے لیے اپنی ویڈیو پروڈکٹس میں بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری کر رہا ہے، جو دنیا کا سب سے تیزی سے ترقی کرنے والا سوشل میڈیا پلیٹ فارم بن گیا ہے۔

      مزید پڑھیں: 

      زکربرگ نے کہا ہے کہ اس میں سرمایہ کاری کرنا اور یہ معلوم کرنا کہ اس سے ملتی جلتے پروڈکٹ ریلز سے زیادہ پیسہ کیسے کمایا جائے، کمپنی کی اولین ترجیح ہے۔ زکربرگ نے اس سال سرمایہ کاروں کے ساتھ ایک اجلاس کے دوران کہا کہ لوگوں کے پاس بہت سے انتخاب ہیں کہ وہ اپنا وقت کیسے گزارنا چاہتے ہیں، اور TikTok جیسی ایپس بہت تیزی سے بڑھ رہی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ اس نئے اقدام پر ہماری توجہ طویل مدتی میں بہت اہم ہے۔

      مزید پڑھیں: 


      مالیاتی خدمات کی فرم Global X ETFs کے ایک تحقیقی تجزیہ کار تیجس ڈیسائی نے کہا کہ فیس بک کی تبدیلی سوشل میڈیا مارکیٹ میں ایک بڑی تبدیلی کا حصہ ہے، جہاں صارفین پرائیویٹ میسجنگ ایپس کا رخ کرتے ہوئے دیگر مواد کو بھی دیکھتے ہیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: