உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    China vs US :امریکہ کے اشارے پر فجی نے چین کو للکارا، ہند-بحرالکاہل کے علاقے میں سفارتی جنگ ہوئی تیز

    چین اور امریکہ کے درمیان بڑھی کشیدگی۔

    چین اور امریکہ کے درمیان بڑھی کشیدگی۔

    China vs US: امریکہ نے آئی پی ای ایف کے بانی رکن کے طور پر فجی کا پرتپاک خیرمقدم کیا ہے۔ امریکہ کی زیر قیادت گروپ میں اب شمال مشرقی اور جنوب مشرقی ایشیا، جنوبی ایشیا، اوشیانا اور بحر الکاہل کے جزائر شامل ہیں۔

    • Share this:
      China vs US :ہند-بحرالکاہل کے علاقے میں ایک بڑا جزیرہ ملک فجی، امریکہ کے انڈوپیسفک اکنامک فریم ورک میں شامل ہوگا۔ امریکہ کے اس اعلان کے بعد چین کو بڑا جھٹکا لگا ہے۔ خاص بات یہ ہے کہ فجی نے یہ قدم ایک ایسے وقت میں اٹھایا ہے جب چینی وزیر خارجہ وانگ یی فجی سمیت بحرالکاہل کے جزیرہ نما ممالک کے وسیع دورے پر ہیں۔ ایسے میں فجی نے براہ راست کواڈ آف امریکہ کا ساتھ دیا ہے۔ غور طلب ہے کہ چینی وزیر خارجہ اس وقت ہند پیسیفک خطے کے دس ممالک کے دورے پر ہیں۔ انہوں نے اس سفر کا آغاز جزائر سولومن سے کیا ہے۔ ایسے میں یہ دیکھنا دلچسپ ہو گیا ہے کہ یہاں اونٹ کس کروٹ بیٹھتا ہے۔ فجی کے امریکی فریم ورک میں شامل ہونے کے ساتھ ہی انڈو پیسیفک میں سرد جنگ کا ایک نیا دور شروع ہو گیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      یٰسین ملک سے ہمدردی کیوں؟ اسلامی ممالک کی تنظیم کے بیان پر ہندوستان نے ظاہر کیا اعتراض

      سفارتی جنگ ہوئی تیز
      خارجہ امور کے ماہر پروفیسر ہرش وی پنت کا کہنا ہے کہ ہند بحرالکاہل کے علاقے میں امریکہ اور چین کے درمیان سفارتی جنگ شدت اختیار کر گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین اور امریکہ کے درمیان اثر و رسوخ کی لڑائی میں فجی ایک کشیدہ محاذ بنتا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکی سفارت کاری کو یہ کامیابی اس وقت ملی ہے جب سولومن پہنچنے والے چینی وزیر خارجہ بحرالکاہل میں آسٹریلیا کے بالکل قریب واقع دس چھوٹے ممالک کے ساتھ سیکورٹی اور تجارتی معاہدے کرنے جا رہے ہیں۔ آسٹریلیا سولومن میں چین کی مداخلت کو خطرہ سمجھتا ہے۔ ایسے میں چین کے اس اقدام سے آسٹریلیا اور امریکہ کشیدگی کا شکار ہیں۔ ایسے میں امریکہ کے ساتھ فجی کا آنا بہت اہم سمجھا جا رہا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Azadi March:پاک کی بدحال اقتصادی صحت پرنقصان پہنچارہاہے عمران کامارچ، پولیس نے کی یہ اپیل

      امریکہ نے فجی کا کیا پرتپاک خیرمقدم
      امریکہ نے آئی پی ای ایف کے بانی رکن کے طور پر فجی کا پرتپاک خیرمقدم کیا ہے۔ امریکہ کی زیر قیادت گروپ میں اب شمال مشرقی اور جنوب مشرقی ایشیا، جنوبی ایشیا، اوشیانا اور بحر الکاہل کے جزائر شامل ہیں۔ امریکہ کے قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان نے موسمیاتی تبدیلی کے خلاف جنگ میں فجی کے اہم کردار پر زور دیا۔ انہوں نے ایک بیان میں کہا، "پوری دنیا میں، ہم ایک آزاد، کھلے اور خوشحال ہند-بحرالکاہل خطے کے لیے اپنے عزم میں متحد ہیں۔"
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: