உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    UN General Assembly: اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں پہلی بار اردو کی گونچ، کثیر لسانی پر دیاگیاغور

    کثیر لسانی کو ترجیح دینے پر سکریٹری جنرل انتونیو گٹیرس کا شکریہ ادا کیا۔

    کثیر لسانی کو ترجیح دینے پر سکریٹری جنرل انتونیو گٹیرس کا شکریہ ادا کیا۔

    ترومورتی نے اس بات پر زور دیا کہ کثیر لسانی کو اقوام متحدہ کی بنیادی قدر کے طور پر تسلیم کیا جاتا ہے اور انھوں نے کثیر لسانی کو ترجیح دینے پر سکریٹری جنرل انتونیو گٹیرس کا شکریہ ادا کیا۔

    • Share this:
      ایک اہم اقدام کے طور پر اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی (UN General Assembly) میں جمعہ کے روز ایک ’’اہم‘‘ قرار داد منظور کی گئی ہے۔ کثیر لسانی سے متعلق ایک قرارداد میں پہلی بار اردو زبان کا بھی ذکر کیا گیا ہے، جس میں ہندوستان نے اس بات پر زور دیا ہے کہ یہ ضروری ہے کہ اقوام متحدہ حقیقی معنوں میں کثیر لسانی کو اپنائے۔

      جملہ 193 رکنی اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں منظور کردہ قرار داد اقوام متحدہ کے سیکرٹریٹ کی ذمہ داری کو واضح کرتی ہے کہ وہ اپنی سرگرمیوں میں کثیر لسانی کو یکساں بنیادوں پر شامل کرے۔ جو اندورا کی طرف سے پیش کی گئی اور ہندوستان سمیت 80 سے زائد ممالک کے تعاون سے اسپانسر کی گئی۔

      یہ اقوام متحدہ کی چھ سرکاری زبانوں عربی، چینی، انگریزی، فرانسیسی، روسی اور ہسپانوی ہے۔ اس کے علاوہ جہاں مناسب ہو، مخصوص مقامی ہدف والے سامعین کے ساتھ رابطے کے لیے غیر سرکاری زبانوں کے استعمال کی کوششوں کو تسلیم کرتا ہے اور اس کی اہمیت پر زور دیتا ہے۔ اقوام متحدہ کی سرگرمیوں میں کثیر لسانی قرارداد میں سرکاری زبانوں کے علاوہ پرتگالی، ہندی، کسوہلی، فارسی، بنگلہ اور اردو جیسی غیر سرکاری زبانوں میں سیکریٹری جنرل کے حالیہ اہم مواصلات اور پیغامات کو اجاگر کرنے کے لیے محکمہ عالمی مواصلات کی کوششوں کو سراہا گیا ہے۔ جو کثیر لسانی کو فروغ دینے کے لیے اہم رول ادا کرتا ہے۔

      یہ محکمے کی حوصلہ افزائی کرتا ہے کہ وہ انہیں تمام چھ سرکاری زبانوں کے ساتھ ساتھ غیر سرکاری زبانوں میں جب بھی مناسب ہو، موجودہ وسائل کے اندر اس کو فروغ دے۔ اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندے ٹی ایس ترمورتی نے جنرل اسمبلی ہال میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس سال پہلی بار قرارداد میں ہندی زبان کا ذکر ہے۔

      انہوں نے کہا کہ یہ قرارداد اقوام متحدہ کے عالمی مواصلات کے محکمے کی حوصلہ افزائی کرتی ہے کہ وہ اہم مواصلات اور پیغامات کو سرکاری اور غیر سرکاری زبانوں بشمول اردو اور ہندی زبان میں پھیلانا جاری رکھے۔ قرارداد میں پہلی بار بنگلہ اور اردو کا بھی ذکر کیا گیا ہے۔ ہم ان تمام اضافے کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ ضروری ہے کہ اقوام متحدہ میں کثیر لسانی کو حقیقی معنوں میں قبول کیا جائے اور ہندوستان اس مقصد کو حاصل کرنے میں اقوام متحدہ کی حمایت کرے گا۔

      مزید ٖپڑھیں: Exclusive: پاکستانی فوج میں کشیدگی؟ کیا باجوا پر سے بھروسہ ٹوٹ رہا ہے؟ اقتدار کے گلیاروں میں بڑا سوال


      ترومورتی نے اس بات پر زور دیا کہ کثیر لسانی کو اقوام متحدہ کی بنیادی قدر کے طور پر تسلیم کیا جاتا ہے اور انھوں نے کثیر لسانی کو ترجیح دینے پر سکریٹری جنرل انتونیو گٹیرس کا شکریہ ادا کیا۔

      مزید پڑھیں: Rajya Sabha Election 2022: راجستھان میں 4 سیٹوں میں 3 پر کانگریس، ایک سیٹ پر بی جے پی کا قبضہ



       

      ترومورتی نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ ہندوستان 2018 سے یو این ڈپارٹمنٹ آف گلوبل کمیونیکیشنز کے ساتھ شراکت داری کر رہا ہے اور ہندی زبان میں خبروں اور ملٹی میڈیا مواد کو مرکزی دھارے میں شامل کرنے کے لیے اضافی بجٹ کا حصہ فراہم کر رہا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: