உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    تاریخ میں پہلی بار: ویتنام کی فوج نے ہندستانی افواج کے ساتھ کی مشقیں، چندیمندر میں تین ہفتے تک جاری رہیں

    ہندوستان اور ویتنام کی فوجوں نے دونوں ممالک کے درمیان بڑھتے ہوئے دفاعی اور سیکورٹی تعلقات کے ایک حصے کے طور پر چندیمندر میں تقریباً تین ہفتے کی فوجی مشق کی

    ہندوستان اور ویتنام کی فوجوں نے دونوں ممالک کے درمیان بڑھتے ہوئے دفاعی اور سیکورٹی تعلقات کے ایک حصے کے طور پر چندیمندر میں تقریباً تین ہفتے کی فوجی مشق کی

    ہندوستان اور ویتنام کی فوجوں نے دونوں ممالک کے درمیان بڑھتے ہوئے دفاعی اور سیکورٹی تعلقات کے ایک حصے کے طور پر چندیمندر میں تقریباً تین ہفتے کی فوجی مشق کی

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Chandigarh | Delhi
    • Share this:
      ہندوستانی فوج نے کہا، یہ پہلا موقع ہے جب ویتنام کی پیپلز آرمی کسی غیر ملکی فوج کے ساتھ تربیتی مشق کر رہی ہے۔ ویتنام آسیان کا ایک اہم ملک ہے اور اس کے چین کے ساتھ بحیرہ جنوبی چین کے علاقے میں تنازعات ہیں۔

      ہندوستان اور ویتنام کی فوجوں نے دونوں ممالک کے درمیان بڑھتے ہوئے دفاعی اور سیکورٹی تعلقات کے ایک حصے کے طور پر چندیمندر میں تقریباً تین ہفتے کی فوجی مشق کی۔ دونوں فوجوں کی 'ون بیکس 2022' مشق یکم اگست کو شروع ہوئی تھی۔ جمعرات کو آخری دن، 16ویں انجینئر سیٹو ٹیم کی قیادت میں ویتنامی فوج کے جوانوں نے پنجور کے کوشلیا ڈیم پر مشق کی۔

      یہ مشق ہندوستان ویتنام کے درمیان دو طرفہ جنگی مشقوں کا ایک بڑا حصہ تھی۔ اس میں عوامی امداد سے متعلق مختلف مہمات کا مظاہرہ کیا گیا۔ اس مشق میں ہندوستانی فوج، فضائیہ اور بحریہ کے علاوہ سرکاری اور غیر سرکاری محکموں نے حصہ لیا۔ ان محکموں میں بنیادی طور پر نیشنل ڈیزاسٹر ریلیف فورس، انڈو تبت بارڈر پولیس، ضلع افسر کے دائرہ اختیار میں آنے والے مختلف محکمے جیسے ڈسٹرکٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی، پولیس کمشنر پنچکولہ ڈاکٹر حنیف قریشی، ڈپٹی پولیس کمشنر پنچکولہ سریندر پال سنگھ، ڈاکٹر مکتا کمار شامل ہیں۔ ، محکمہ صحت کے سول سرجن پنچکولہ، فائر اسٹیشن، سرچ ریلیف اینڈ ڈیزاسٹر اتھارٹی، محکمہ موسمیات اور محکمہ آبپاشی نے حصہ لیا۔


      نہ صرف Monkeypox اور کورونا، بچوں پر منڈرا رہا ہے Encephalitisو Tomato Fever کا خطرہ

      چنئی ایئرپورٹ پر پکڑا گیا بینکاک کا مسافر، جانچ کی تو ملا کچھ ایسا افسران کے اڑ گئے ہوش

       

      دونوں فوجوں کی طرف سے اس مشق کا مقصد اقوام متحدہ کے امن مشنوں میں فوج کی انجینئرنگ اور میڈیکل ٹیموں کو تعینات کرنا ہے۔ ویتنام نے پہلی بار جنوبی سوڈان میں اقوام متحدہ کے امن مشن کے لیے ایک ٹیم تعینات کی ہے، جبکہ ہندوستان طویل عرصے سے اس مہم کا حصہ رہا ہے۔ ہندوستان اور ویتنام مشترکہ مفادات کے تحفظ کے لیے گذشتہ برسوں سے اپنے بحری سیکورٹی تعاون کو بڑھا رہے ہیں۔ ہندوستانی فوج نے کہا، یہ پہلا موقع ہے جب ویتنام کی پیپلز آرمی کسی غیر ملکی فوج کے ساتھ تربیتی مشق کر رہی ہے۔ ویتنام آسیان کا ایک اہم ملک ہے اور اس کا چین کے ساتھ بحیرہ جنوبی چین کے علاقے میں تنازعہ ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: