اپنا ضلع منتخب کریں۔

    نیپال کے سابق وزیر اعظم سشیل کوئرالہ کا انتقال

    کھٹمنڈو۔ نیپال کے سابق وزیر اعظم اور نیپالی کانگریس کے صدر سشیل کوئرالا کا کل دیر رات انتقال ہو گیا۔

    کھٹمنڈو۔ نیپال کے سابق وزیر اعظم اور نیپالی کانگریس کے صدر سشیل کوئرالا کا کل دیر رات انتقال ہو گیا۔

    کھٹمنڈو۔ نیپال کے سابق وزیر اعظم اور نیپالی کانگریس کے صدر سشیل کوئرالا کا کل دیر رات انتقال ہو گیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      کھٹمنڈو۔ نیپال کے سابق وزیر اعظم اور نیپالی کانگریس کے صدر سشیل کوئرالا کا کل دیر رات انتقال ہو گیا۔ وہ 77 سال کے تھے۔ مسٹر کوئرالا کے پرائیویٹ سکریٹری اتل کوئرالہ نے بتایا کہ وہ پھیپھڑوں کی بیماری میں مبتلا تھے۔ ان کا رات 12 بج کر 50 منٹ پر انتقال ہو گیا۔ ان کے انتقال کی خبر ملتے ہی نیپالی کانگریس کے کئی لیڈر ان ان کی رہائش گاہ پر پہنچے۔ پارٹی کے جنرل سکریٹری پرکاش مان سنگھ نے کہا کہ نیپال کانگریس نے فی الحال پارٹی کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے پہلے کسی بھی انتخابی عمل کو ملتوی کر دیا ہے۔


      مسٹر کوئرالا 10 فروری 2014 میں وزیر اعظم بنے تھے۔وہ باكے پارلیمانی حلقہ سے منتخب ہوئے تھے اور چتون پارلیمانی حلقہ سے وہ دوسری بار 19 نومبر 2013 میں کامیاب ہوئے تھے۔ وہ حال ہی میں پھیپھڑوں کے کینسر کا کامیاب علاج کراکر امریکہ سے واپس آئے تھے۔ انہیں گزشتہ سال نیپال کے نئے آئین کو نافذ کرنے کا کریڈٹ جاتا ہے۔ سال 1960 کے بعد آنجہانی کوئرالہ نے 16 سال تک ہندوستان میں جلاوطنی کی زندگی بھی گزاری تھی۔ مسٹر کوئرالا طیارہ اغوا کیس میں ملوث ہونے کے معاملے میں ہندوستانی جیل میں تین سال کی سزا کاٹ چکے ہیں۔


      وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنے سرکاری ٹوئٹر ہینڈل پر مسٹر کوئرالا کے انتقال پر غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ’’نیپال کانگریس نے اپنا ایک بڑا لیڈر جس نے دہائیوں تک ملک کی خدمت کی اورہندوستان نے ایک قابل قدر دوست کھو دیا ۔ان کے انتقال سے گہرا دکھ ہوا ہے ‘‘۔

      First published: