உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان کے سابق وزیر اعظم عمران خان کی ہوگی گرفتاری، گھر کے باہر پولیس تعینات: وزیر داخلہ

    نیوز ایجنسی اے این آئی نے پاکستانی میڈیا پورٹل دی نیوز کے حوالے سے بتایا کہ عمران خان کو فسادات، بغاوت، انتشار پھیلانے اور مسلح حملوں سمیت دو درجن سے زائد مقدمات کا سامنا ہے۔

    نیوز ایجنسی اے این آئی نے پاکستانی میڈیا پورٹل دی نیوز کے حوالے سے بتایا کہ عمران خان کو فسادات، بغاوت، انتشار پھیلانے اور مسلح حملوں سمیت دو درجن سے زائد مقدمات کا سامنا ہے۔

    نیوز ایجنسی اے این آئی نے پاکستانی میڈیا پورٹل دی نیوز کے حوالے سے بتایا کہ عمران خان کو فسادات، بغاوت، انتشار پھیلانے اور مسلح حملوں سمیت دو درجن سے زائد مقدمات کا سامنا ہے۔

    • Share this:
      اسلام آباد: پاکستان کے سابق وزیراعظم عمران خان کی مشکلات میں مزید اضافہ ہونے والا ہے۔ شہباز شریف حکومت نے ان کی گرفتاری کا اعلان کر دیا ہے۔ پاکستان کے وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ عمران خان کی تین ہفتوں کی ٹرانزٹ ضمانت ختم ہونے کے بعد انہیں گرفتار کر لیا جائے گا۔ بانی گالہ میں عمران خان کے گھر کے باہر بھی سکیورٹی فورسز کو تعینات کیا گیا ہے۔ دیکھنا یہ ہے کہ عمران خان اس بحران سے بچنے کے لیے کیا اقدامات کرتے ہیں۔

      نیوز ایجنسی اے این آئی نے پاکستانی میڈیا پورٹل دی نیوز کے حوالے سے بتایا کہ عمران خان کو فسادات، بغاوت، انتشار پھیلانے اور مسلح حملوں سمیت دو درجن سے زائد مقدمات کا الزام ہے۔ 2 جون کو پشاور ہائی کورٹ نے 50 ہزار روپے کے مچلکوں پر عمران خان کی تین ہفتوں کے لیے راہداری ضمانت منظور کی تھی۔ یہ ضمانت عدالت نے عمران خان کی جماعت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے اسلام آباد مارچ سے قبل دی تھی۔

      دی نیوز کے مطابق وزیر ثناء اللہ نے کہا ہے کہ عمران خان دو درجن سے زائد مقدمات میں ملزم ہیں۔ عمران خان کی بنی گالہ رہائش گاہ کے باہر سیکیورٹی اہلکار تعینات ہیں۔ انہیں عدالت کی طرف سے دی گئی حفاظتی ضمانت کی میعاد ختم ہونے کے بعد گرفتار کیا جائے گا۔ ثناء اللہ نے کہا کہ جمہوری معاشرے میں وہ شخص کیسے سیاسی جماعت کا سربراہ بن سکتا ہے جو لوگوں کو اکسائے اور جس نے اپنے مخالفین کو ملک دشمن کہہ کر اخلاقی اور جمہوری اقدار کو پامال کیا ہو۔

      اس ملک میں کوئی بھی مسلم سفر حج پر نہیں جا سکے گا، جانئے کیا ہے وجہ



      Haunted Places:یہ ہیں دنیا کی 10سب سے زیادہ بھوتیاجگہیں، دن میں بھی جانے سے کانپتے ہیں لوگ

      وزیر داخلہ نے کہا کہ وہ عمران خان کا اسلام آباد میں استقبال  کرتے ہیں۔ انہیں قانون کے مطابق تحفظ فراہم کیا جا رہا ہے۔ سنیچر کی دیر  رات اسلام آباد پولیس کا کہنا تھا کہ عمران خان کی پشاور سے اسلام آباد واپسی کے امکان کے پیش نظر بانی گالہ کے گھر کے چاروں طرف سکیورٹی بڑھا دی گئی ہے۔ پورے علاقے کو ہائی الرٹ کر دیا گیا ہے۔ دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: