உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    حقانی نیٹ ورک کے بانی جلال الدین حقانی کی موت، افغان طالبان نے کیا اعلان

    جلال الدین حقانی کی فائل فوٹو: فوٹو رائٹرز۔

    جلال الدین حقانی کی فائل فوٹو: فوٹو رائٹرز۔

    جلال الدین حقانی نے 1970 کی دہائی میں اس نیٹ ورک کی بنیاد رکھی تھی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:

       افغانستان میں دہشت گردانہ سرگرمیاں چلانے والے چھاپہ مار گروپ حقانی نیٹ ورک کے بانی جلال الدین حقانی کی طویل علالت کے بعد موت ہو گئی۔ یہ اطلاع طالبان نے منگل کو دی ہے۔


      جلال الدین حقانی نے 1970 کی دہائی میں اس نیٹ ورک کی بنیاد رکھی تھی۔ کچھ سال پہلے اس نے نیٹ ورک کی ذمہ داری اپنے بیٹے سراج الدین حقانی کو سونپ دی تھی۔ فی الحال وہ افغان طالبان کا دوسرا سب سے اہم رہنما ہے۔

      طالبان نے ایک بیان میں بتایا کہ جلال الدین حقانی کا بیٹا سراج الدین حقانی اب اس دہشت گرد گروپ کا سربراہ ہوگا اور وہ طالبان کا ڈپٹی لیڈر بھی ہے۔ جلال الدین حقانی کی موت ایک طویل بیماری کے بعد ہوئی ہے۔ حالانکہ یہ پتہ نہیں ہے کہ جلال الدین کی موت کب اور کہاں ہوئی ہے۔ گزشتہ چند سالوں میں اکثر ہی اس کی موت کی خبریں آتی رہی ہیں۔

      طالبان نے ٹوئٹر پر انگریزی میں جاری اپنے بیان میں کہا کہ جلال الدین موجودہ دور کے اہم جہادیوں میں سے ایک تھا۔ وہ ایک افغان مجاہدین کمانڈر بھی رہا تھا جس نے 1980 کی دہائی میں امریکہ اور پاکستان کی مدد سے افغانستان میں سوویت یونین کے قبضے کے خلاف لڑائی لڑی۔ یہ نیٹ ورک امریکی قبضے کے بعد سے ہی افغانستان میں وقت-وقت پر دہشت گردانہ حملوں کے لئے ذمہ دار رہا ہے۔

      نیوز ایجنسی یو این آئی، اردو کے ان پٹ کے ساتھ
      First published: