ہوم » نیوز » عالمی منظر

والد کی موت کے بعد چار سالوں تک بیٹی کرتی رہی میسیج ، پھر ایک دن آیا ایسا جذباتی جواب ...۔

والد کی موت کے چار سالوں بعد تک بیٹی انہیں روز میسیج کیا کرتی تھی ، اس کو لگا تھا کہ اس طرح وہ اپنے والد کی یادوں کے ساتھ ہمیشہ جڑی رہے گی ۔

  • Share this:
والد کی موت کے بعد چار سالوں تک بیٹی کرتی رہی میسیج ، پھر ایک دن آیا ایسا جذباتی جواب ...۔
والد کی موت کے بعد چار سالوں تک بیٹی کرتی رہی میسیج ، پھر ایک دن آیا ایسا جذباتی جواب ...۔

والد کی موت کے چار سالوں بعد تک بیٹی انہیں روز میسیج کیا کرتی تھی ، اس کو لگا تھا کہ اس طرح وہ اپنے والد کی یادوں کے ساتھ ہمیشہ جڑی رہے گی ۔ والد کی برسی سے ٹھیک ایک دن پہلے بھی اس نے ایک جذباتی میسیج کیا تھا ، لیکن اس مرتبہ میسیج یک طرفہ نہیں تھا ، بلکہ اس کا جواب بھی آیا ۔ موبائل پر آئے جواب کو دیکھنے کے بعد بیٹی کی خوشی کا ٹھکانہ نہیں رہا ۔

امریکہ کی رہنے والی 23 سال کی چیسٹٹی پیٹرسن کے والد کی چار سال پہلے موت ہوگئی تھی ۔ والد کی موت کے غم میں بیٹی پوری طرح ٹوٹ گئی تھی ۔ وہ اپنے والد کو ہمیشہ اپنے قریب رکھنا چاہتی تھی ، اس لئے اس نے اپنے والد کے نمبر پر روزانہ میسیج بھیجنا شروع کردیا ۔ چیسٹٹی اپنی ہر چھوٹی بڑی بات کو اپنے والد کو میسیج کے ذریعہ بتاتی تھی ۔ اس کو معلوم تھا کہ اس کے والد اب اس دنیا میں نہیں ہیں اور اس کے کسی بھی میسیج کا جواب بھی نہیں آئے گا ۔ اس کے باوجود چیسٹٹی ہر روز صبح اور شام اپنے والد کے موبائل پر میسیج بھیجا کرتی تھی ۔

چیسٹٹی نے والد کی برسی سے صرف ایک دن پہلے انہیں میسیج کرتے ہوئے لکھا تھا کہ ہیلو پاپا ، کل کا دن میرے لئے کافی مشکل بھرا ہونے والا ہے ، کل آپ کو دنیا سے گئے چار سال ہوجائیں گے ، ان چار سالوں میں ایسا ایک بھی دن نہیں ہوگا ، جب میں نے آپ کو یاد نہیں کیا ہوگا ۔ ان چار سالوں میں بہت کچھ ہوا اور میں اپنے ہر ایک لمحہ کو آپ کے ساتھ شیئر کرتی رہی ہوں ۔ میں نے اب کینسر کو مات دیدی ہے اور جب سے آپ گئے ہیں تب سے میں بیمار بھی نہیں پڑی ہوں ۔ میں نے آپ سے وعدہ کیا تھا کہ میں اپنی دیکھ بھال اچھی طرح سے کروں گی ۔ میں نے اب کالج ختم کرلیا ہے ۔ مجھے کسی سے پیار بھی ہوا تھا اور میرا دل بھی ٹوٹا ، آپ ہوتے تو اس کو مار ہی ڈالتے ۔ مجھے لگتا تھا کہ آپ کے جانے کے بعد سب کچھ ختم ہوگیا ہے ، مگر میں ہاری نہیں ، پھر میری زندگی میں پھر کوئی آیا اور اس نے میری زندگی بچالی ۔

America, Mobile, Mobile Message اپنے دوسرے میسیج میں چیسٹٹی نے لکھا کہ میں ابھی بھی ماں کو ہر دن تنگ کرتی رہتی ہوں ، مجھے معاف کردیجئے گا ۔ لیکن جب مجھے آپ کی سب سے زیادہ ضرورت ہے ، تب آپ ہمارے درمیان نہیں ہیں ۔ مجھے شادی سے بہت ڈر لگتا ہے کیونکہ شادی میں آپ نہیں ہوں گے ۔ میں تنہا رہوں گی تو آپ نہیں ہوں گے ۔ میں صرف اتنا کہوں گی کہ میں آپ سے کافی محبت کرتی ہوں اور آپ کی کمی ہمیشہ محسوس ہوتی رہے گی ۔ us girl2 چیسٹٹی نے سوچا بھی نہیں تھا کہ چار سال بعد اس کے اس میسیج کا جواب آ جائے گا ۔ چیسٹٹی کے میسیج کے جواب میں لکھا گیا تھا : ہائی سویٹ ہارٹ ، میں تمہارا والد نہیں ہوں ، لیکن مجھے گزشتہ چار سالوں سے آپ کے سبھی میسیجز مل رہے ہیں ، میں ہر دن تمہارے میسیج کا انتظار کرتا ہوں ، میرا نام بریڈ ہے اور میری بیٹی کی اگست 2014 میں ایک کار حادثہ میں موت ہوگئی تھی ۔ آپ کے میسیج نے مجھے زندہ رکھا ہے ۔ جب بھی آپ کا میسیج آتا ہے تو مجھے لگتا ہے کہ یہ خدا کی مرضی ہے ۔ چیسٹٹی کا یہ میسیج سوشل میڈیا پر کافی تیزی سے وائرل ہورہا ہے ۔ چیسٹٹی کے پوسٹ پر ابھی تک 22 ہزار سے زیادہ کمنٹس آچکے ہیں اور تین لاکھ سے زیادہ مرتبہ شیئر کیا جاچکا ہے ۔
First published: Oct 31, 2019 09:06 PM IST