ہوم » نیوز » عالمی منظر

جی 7 میٹنگ : برطانیہ میں ملے دنیا کے بڑے لیڈران ، کورونا سے جنگ میں دیں گے ایک ارب ڈوز!

G7 Meeting: چوٹی کانفرنس کی شروعات ہونے سے پہلے ہی امریکی صدر جو بائیڈن نے 50 کروڑ ڈوز اور جانسن نے کورونا ویکسین کی 10 کروڑ خوراک شیئر کرنے کا عہد ظاہر کیا ۔

  • Share this:
جی 7 میٹنگ : برطانیہ میں ملے دنیا کے بڑے لیڈران ، کورونا سے جنگ میں دیں گے ایک ارب ڈوز!
جی 7 میٹنگ : برطانیہ میں ملے دنیا کے بڑے لیڈران ، کورونا سے جنگ میں دیں گے ایک ارب ڈوز!

برطانیہ کے وزیر اعظم بورس جانسن نے جمعہ کو کاربس بے میں جی 7 چوٹی کانفرنس میں اس گروپ کے لیڈروں کا خیرمقدم کیا ۔ کورونا وبا کی شروعات کے بعد پہلی مرتبہ یہ لیڈران ایک ساتھ جمع ہوئے ہیں ۔ ان لیڈروں کی گفتگو میں کورونا وائرس کا معاملہ چھائے رہنے کی امید تھی ۔ ساتھ ہی امیر ممالک کے اس گروپ کے لیڈروں کے ذریعہ جدوجہد کررہے ممالک کیلئے ٹیکے کی کم سے کم ایک ارب خوراک شیئر کرنے کیلئے عزم ظاہر کئے جانے کی بھی امید تھی ۔


چوٹی کانفرنس کی شروعات ہونے سے پہلے ہی امریکی صدر جو بائیڈن نے 50 کروڑ ڈوز اور جانسن نے کورونا ویکسین کی 10 کروڑ خوراک شیئر کرنے کا عہد ظاہر کیا ۔ بائیڈن نے کہا کہ ہم اپنے عالمی شراکت داروں کے ساتھ مل کر دنیا کو اس وبا سے باہر نکالنے میں مدد کرنے جارہے ہیں ۔ جی 7 میں کناڈا ، فرانس ، جرمنی ، اٹلی اور جاپان بھی شامل ہیں ۔


100 بلین ڈالر مختص کرنے پر غور


ادھر امریکہ اور دیگر جی گروپ ممالک (جی۔ 7) ​​کووڈ 19 وبائی مرض سے لڑنے میں فوری مدد کے طور پر بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کی مدد سے 100 ارب ڈالر تک کی امداد فراہم کرسکتے ہیں۔ وائٹ ہاؤس نے یہ اعلان جمعہ کو کیا۔

وائٹ ہاؤس نے اپنے بیان میں کہا کہ "امریکہ اور دیگر جی ۔7 ممالک بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کی مجوزہ خصوصی ڈرائنگ رائٹس (ایس ڈی آر) مختص کرنے والے ممالک کی مدد کرنے کے لئے عالمی سطح پر کوششوں پر غور کررہی ہیں ، جن کو اس کی ضرورت ہے۔ اس سمٹ سے حفاظتی ٹیکوں سمیت 100 بلین ڈالر تک کی صحت کی ضروریات کو مدد ملے گی اور بیشتر کمزور ممالک کی معاشی بحالی میں مدد ملے گی اور متوازن ، پائیدار اور جامع عالمی بحالی کو فروغ ملے گا۔

خیال رہے کہ برطانیہ فی الحال جی -7 سربراہی اجلاس کی میزبانی کر رہا ہے۔ برطانیہ نے جمعہ کو کہا تھا کہ دنیا کے امیر ترین ممالک کے رہنما کم آمدنی والے ممالک کو ایک ارب کورونا ویکسین کی خوراک عطیہ کرنے پر راضی ہوں گے۔

امریکہ نے جمعرات کو اعلان کیا کہ وہ 92 نچلی اور درمیانی آمدنی والے ممالک اور افریقی یونین کو 500 ملین فائزر ویکسین عطیہ کرے گا۔ یہ ویکسین امریکہ میں تیار کی جائیں گی اور پہلی کھیپ اگست 2021 میں شروع ہوگی ، اس سال کے آخر تک 200 ملین خوراکیں فراہم کرنے کا منصوبہ ہے۔

نیوز ایجنسی یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 11, 2021 11:00 PM IST