உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    خوبصورت خاتون کا سنسنی خیز دعوی، 'زیادہ بولڈ لک کی وجہ سے مال سے دھکا مار کر نکالا'

    خوبصورت خاتون کا سنسنی خیز دعوی، 'زیادہ بولڈ لک کی وجہ سے مال سے دھکا مار کر نکالا' ۔ تصویر : Instagram@emmyruss

    خوبصورت خاتون کا سنسنی خیز دعوی، 'زیادہ بولڈ لک کی وجہ سے مال سے دھکا مار کر نکالا' ۔ تصویر : Instagram@emmyruss

    جرمن ماڈل اور انسٹاگرام انفلوئنسر ایمی روس کو انسٹاگرام پر تقریبا دو لاکھ لوگ فالو کرتے ہیں ۔ ایمی اپنی بولڈ اور گلیمرس اداوں سے اپنے فالوورس کو دیوانہ بنالیتی ہیں ۔ وہ اکثر دنیا کے الگ الگ شہروں میں گھومتی رہتی ہیں ، جس کی تصاویر وہ شیئر کرتی ہیں ۔

    • Share this:
      انسٹاگرام کی بڑھتی مقبولیت کی وجہ سے کئی لوگ اپنا کریئر اس سوشل میڈیا پلیٹ فارم کے ذریعہ ہی بناتے ہیں ۔ کئی لڑکے اور لڑکیاں انسٹاگرام پر ماڈل اور انفلوئینسر کی طرح کام کرتے ہیں ۔ انسٹاگرام پر کئی ملکی اور غیر ملکی انفلوئنسر کافی مشہور ہیں ۔ لوگ ان کی پوسٹس کو کافی پسند کرتے ہیں ۔ انسٹاگرام پر لوگ خاتون انفلوئنسر کی خوبصورتی کے دیوانے ہوتے ہیں ۔ حال ہی میں ایک خاتون انسٹاگرام انفلوئنسر سرخیوں میں ہیں ۔ خاتون کو اپنی خوبصورتی کی وجہ سے بے عزت ہونا پڑا ہے ۔

      دراصل ہوا یوں کہ دبئی کے مشہور مال سے وہاں کی انتظامیہ اور گارڈس نے انہیں یہ کہتے ہوئے باہر نکال دیا کہ وہ زیادہ ہی سیکسی ہیں ۔ جرمن ماڈل اور انسٹاگرام انفلوئنسر ایمی روس کو انسٹاگرام پر تقریبا دو لاکھ لوگ فالو کرتے ہیں ۔ ایمی اپنی بولڈ اور گلیمرس اداوں سے اپنے فالوورس کو دیوانہ بنالیتی ہیں ۔ وہ اکثر دنیا کے الگ الگ شہروں میں گھومتی رہتی ہیں ، جس کی تصاویر وہ شیئر کرتی ہیں ۔ حال ہی میں ایمی دبئی گئی تھیں ۔ دبئی میں گزارے اپنے وقت کی بھی کچھ تصاویر انہوں نے شیئر کی ہیں ۔ حال ہی میں دبئی سے وابستہ ان کا ایک قصہ کافی زیادہ وائرل ہورہا ہے ۔

      22 سال کی ایمی نے بتایا کہ وہ دبئی مال میں شاپنگ کرنے گئی تھیں ۔ انہوں نے کراپ ٹاپ اور منی اسکرٹ پہنا ہوا تھا ۔ مال میں داخل ہونے کے بعد وہاں موجود سیکورٹی گارڈس نے ایمی سے کہا کہ وہ ان کپڑوں میں مال میں نہیں گھوم سکتی ہیں ۔ گارڈس نے ایمی کو شاپنگ بھی نہیں کرنے دی ۔ مال کے سیکوریٹی اہلکار صرف یہیں تک نہیں رکے ۔ انہوں نے ایمی کو مال سے باہر جانے کیلئے کہا ۔

      ساتھ ہی انہوں نے ایک تحریری وارننگ بھی دی اور کہا کہ اگر وہ نہیں جائیں گی تو وہ لوگ پولیس کو بلالیں گے ۔ تحریری وارننگ میں لکھا تھا کہ برائے کرم عزت دار کپڑے پہنیں ۔ ایمی نے بتایا کہ پھر اس نے ایک باہر کی دکان سے بڑی سائز کی ٹی شرٹ پہنی اور اس کو پہن کر ہی وہ مال میں جاسکی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: