உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جرمن یونیورسیٹی کچھ نہیں کرنے کے لئے دے گی 1.4 لاکھ روپئے کے وظائف، 15 ستمبر تک جمع کریں درخواست

    جرمن یونیورسیٹی کچھ نہیں کرنے کے لئے دے گی 1.4 لاکھ روپئے کے وظائف

    جرمن یونیورسیٹی کچھ نہیں کرنے کے لئے دے گی 1.4 لاکھ روپئے کے وظائف

    درخواست دہندگان کو یونیورسیٹی کے اکیڈمکس کو یہ بھروسہ دلانا ہو گا کہ 1600 یورو کے تین وظائف میں سے ایک کو جیتنے کے لئے دلچسپ طریقہ سے کس طرح غیرفعال ہوں گے۔ درخواست فارم میں درخواست دہندگان سے دو سوال پوچھے گئے ہیں۔ پہلا آپ کیا نہیں کرنا چاہتے ہیں اور جو آپ کرنا نہیں چاہتے ہیں ، وہ نہ کرنا کیوں اہم ہے؟

    • Share this:
      برلن۔ جرمن یونیورسیٹی (German University) ایسے لوگوں کو وظائف (Grant to lazy people) دے رہی ہے جو کچھ نہیں کرنا چاہتے ہیں۔ دراصل، جرمنی کی یونیورسیٹی سستی، کاہلی کے لئے وظائف (Scholarships) دے رہی ہے اور ان لوگوں کو بھی پیسہ دینے کو تیار ہے جو کم سے کم کام کرتے ہوں۔ ہیمبرگ میں یونیورسیٹی آف فائن آرٹس ایک انوکھے پروجیکٹ میں حصہ لینے کے لئے ایسے لوگوں کی تلاش کر رہی ہے جو سست ہوں اور جن میں اولوالعزمی کی کمی ہو۔

      درخواست دہندگان کو دلانا ہو گا یہ بھروسہ

      درخواست دہندگان کو یونیورسیٹی کے اکیڈمکس کو یہ بھروسہ دلانا ہو گا کہ 1600 یورو کے تین وظائف میں سے ایک کو جیتنے کے لئے دلچسپ طریقہ سے کس طرح غیرفعال ہوں گے۔ درخواست فارم میں درخواست دہندگان سے دو سوال پوچھے گئے ہیں۔ پہلا آپ کیا نہیں کرنا چاہتے ہیں اور جو آپ کرنا نہیں چاہتے ہیں ، وہ نہ کرنا کیوں اہم ہے؟ اس کے لئے درخواست دہندگان 15 ستمبر تک درخواستیں دے سکتے ہیں۔

      مسلسل کامیابی کی دوڑ سے باہر نکلنا ہے ہدف

      اس پروجیکٹ کو ڈیزائن کرنے والے پروفیسر فریڈرک وان بورس کے مطابق، معاشی۔ سماجی تبدیلی لانے میں مدد کرنے کے لئے سستی، کاہلی کا باریکی سے مطالعہ کرنا اہم ہے۔ یہ تجربہ زندگی میں مسلسل کامیابی حاصل کرنے کی دوڑ سے باہر نکالنے اور گول گول گھومتے جا رہے زندگی کے پہیے سے الگ ہٹنے سے وابستہ ہے۔ جرمنی بھر کے درخواست دہندگان کو 15 ستمبر سے پہلے ’ فعال غیر فعالیت‘ اپنے پروجیکٹ سے متعلق خیالات کو جمع کرنا ہو گا۔

      میرے پاس ان باتوں کے لئے وقت ہے

      دوسری طرف پروفیسر وان بورس نے ڈیوش ویلے براڈکاسٹر کو بتایا کہ اگر ہم ایسے سماج میں رہنا چاہتے ہیں جو کم توانائی کھپت کرتا ہے، کم وسائل کو برباد کرتا ہے تو یہ اقدار کا صحیح سسٹم نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ کہہ کر سماجی شہرت حاصل کرنا اچھا نہیں ہو گا کہ میرے پاس خواب دیکھنے کا وقت ہے، دوستوں سے ملنے کا وقت ہے، پاوں پر پاوں رکھ کر آرام کرنے کا وقت ہے، میرے پاس کچھ بھی نہ کرنے کے لئے وقت ہے۔
      Published by:Nadeem Ahmad
      First published: