ہوم » نیوز » عالمی منظر

مسجد الحرام میں عازمین کی خدمت کےلیے روبوٹ کااستعمال، اب روبوٹس بھی کریں گےعازمین کی مدد

سعودی پریس ایجنسی نے اطلاع دی ہے کہ ایوان صدر بڑی تیزی سے جراثیم کش ادویات کا چھڑکاؤں، وبائی امراض پر قابو پانے اور عظیم الشان مسجد میں آب زمزم کی تقسیم کے لئے روبوٹ کا استعمال کررہا ہے۔

  • Share this:
مسجد الحرام میں عازمین کی خدمت کےلیے روبوٹ کااستعمال، اب روبوٹس بھی کریں گےعازمین کی مدد
آب زمزم کی تقسیم کے لئے روبوٹ کا استعمال

دنیا کی دو عظیم مساجد مسجد الحرام اور مسجد نبوی ﷺ کے انتظامات اور دیگر امور کے جنرل ایوان صدر نے ان مساجد میں مصنوعی ذہانت (artificial intelligence) کے استعمال کو تیز کردیا ہے۔ عالمی وبا کورونا وائرس کے تحت سخت احتیاطی اقدامات کے دوران سالانہ حج کے لیے مکہ مکرمہ میں تمام طرح کے انتظامات کرلیے گئے ہیں۔


سعودی پریس ایجنسی نے اطلاع دی ہے کہ ایوان صدر بڑی تیزی سے جراثیم کش ادویات کا چھڑکاؤں، وبائی امراض پر قابو پانے اور عظیم الشان مسجد میں آب زمزم کی تقسیم کے لئے روبوٹ کا استعمال کررہا ہے۔


  • مصنوعی ذہانت کا بھرپور استعمال:


تکنیکی اور خدمات سے متعلق امور کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر منصور المنصوری (Mansour Al-Mansoori) نے اے آئی کے بڑھتے ہوئے استعمال پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ’’صدر مملکت اس کے جامع ترقیاتی منصوبے کے تحت 2024 میں سعودی ویژن (2030) کے ساتھ تسلسل برقرار رکھنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ دو مساجد کی خدمت کے لیے جدید ٹکنالوجی اور خاص کر مصنوعی ذہانت کا بھرپور استعمال کیا جائے گا‘‘۔


ان کا مزید کہنا تھا کہ گوگل میپ کے ذریعے پروگرام کردہ نقشوں کے مطابق گرافک مسجد کے اندر روبوٹ چلانے میں مصنوعی ذہانت کا استعمال کیا جائے گا، جس میں مطاف صحن ، المساء اور اس کی تمام سہولیات سمیت مسجد کے تمام حصوں کا احاطہ کیا جائے گا۔

المنصوری نے نشاندہی کی کہ ایوان صدر عالمی سطح پر اور بہترین خدمات کی فراہمی کے لئے جدت اور ٹکنالوجی کے ساتھ مستعدی سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کر رہا ہے۔

  • حجاج کی ہمہ وقت خدمت:


سعودی ایوان صدر میں مصنوعی ذہانت کے دفتر کے ڈائریکٹر سنن ال ترکستانی (Sinan Al-Turkistani) نے بیان کیا کہ صدارت نے ٹیکنیکل اور ڈیجیٹل ترقی کی طرف مملکت کے رجحان اور اے آئی ٹکنالوجی میں اس کی دلچسپی کے ساتھ اعداد و شمار میں مہارت والا دفتر متعارف کرایا ہے۔ مصنوعی ذہانت کے تحت دو عظیم مساجد میں حجاج کے لیے بھی خدمات حاصل کی جائے گی۔


انہوں نے مزید کہا کہ ’’یہ دفتر موثر اقدامات کو فروغ دینے کا خواہاں ہے جس کا مقصد حجاج کرام کے تجربات کو بہتر بنانا ہے، جو یہاں آ کر قیام کرتے ہیں۔ اس ٹکنک کے ذریعہ آواز ، شبیہہ اور حرکات کے ذریعہ زبانوں کی نشاندہی اور دیگر ترسیلی کام بھی لیا جائے گا۔

اس میں جدید ترین موبائل آٹومیٹک آلات استعمال ہوں گے جو براہ راست مرکزی پروسیسنگ سسٹم اور اسمارٹ ڈیٹا بیس سے منسلک ہیں ، جو اعداد و شمار کو اسٹور کرتے ہیں اور منصوبہ بندی ، آپریشنز مینجمنٹ اور فعال فیصلہ سازی میں اس کا استعمال کرتے ہیں۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: Jul 15, 2021 02:09 PM IST