یونان کے وزیر اعظم الیکسس سپراس نے دیا استعفی

یونان کے وزیر اعظم الیکسس سپراس نے اپنا اور اپنی کابینہ کا استعفی صدر کو پیش کرکے جلد از جلد انتخابات کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔

Aug 21, 2015 12:32 PM IST | Updated on: Aug 21, 2015 12:32 PM IST
یونان کے وزیر اعظم الیکسس سپراس نے دیا استعفی

ایتھز : یونان کے وزیر اعظم الیکسس سپراس نے اپنا اور اپنی کابینہ کا استعفی صدر کو پیش کرکے جلد از جلد انتخابات کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔کل رات صدر سے ملاقات کرکے مسٹر سپراس نے کہا کہ موجودہ پارلیمنٹ میں اکثریت کی حکومت نہیں ہے اور یہ قومی یکجہتی کو ظاہر نہیں کرتی۔مسٹر سپراس 300 رکنی پارلیمنٹ میں ملک کے نئے امدادی پیکج پروگرام کے سلسلہ میں حکمراں پارٹی کے اندر بغاوت ہونے کے بعد اقلیت میں آگئے تھے۔

جمعرات کو ٹی وی پر اپنے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ اب جبکہ ان کے ملک کو تیسرا بین الاقوامی بیل آوٹ پیکج مل رہا ہے تو یہ ان کی اخلاقی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنے عہدے سے مستعفی ہو جائیں۔ اور یہ وقت ہے کہ اس حوالے سے کیے جانے والے معاہدے پر قوم اپنا فیصلہ دے۔

یونان میں نئے انتخابات کی تاریخ کا اعلان تو نھیں ہوا تاہم توقع کی جا رہی ہے کہ 20 ستمبر کو انتخابات کا انعقاد ہوگا۔ مستعفی ہونے والے وزیراعظم ایلکسس تسیپراس اپنی جماعت سیریزا پارٹی کی قیادت کریں گے تاہم انھیں بیل آوٹ پیکج میں معاشی اصلاحات کے حوالے سے اپنی ہی جماعت کے اراکین کی ناراصگی کا سامنا کرنا پڑا۔

خیال رہے کہ جمعرات کو یورپی پارلیمان کی منظوری کے بعد یونان کو یورپی یونین کی جانب سے بیل آؤٹ کی پہلی قسط موصول ہوئی ہے۔اس رقم کی بدولت یونان یورپی سینٹرل بینک کا تین ارب 20 کروڑ یورو کا قرض ادا کر سکے گا۔

Loading...

اس معاہدے کے ذریعے یونان کو مجموعی طور پر 85 ارب یورو ملیں گے۔گذشتہ ماہ یونانی حکومت اور اس کے بین الاقوامی قرض خواہوں کے درمیان معاہدہ طے پا گیا تھا جس کی وجہ سے یونان یورو زون سے خارج ہونے سے بچ گیا تھا۔

Loading...