உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان پھر بے نقاب، دہشت گردانہ فنڈنگ کیس میں حافظ سعید کی جماعت الدعوۃ سے منسلک 6 لیڈر بری

    پاکستان پھر بے نقاب، دہشت گردانہ فنڈنگ کیس میں حافظ سعید کی جماعت الدعوۃ سے منسلک 6 لیڈر بری

    پاکستان پھر بے نقاب، دہشت گردانہ فنڈنگ کیس میں حافظ سعید کی جماعت الدعوۃ سے منسلک 6 لیڈر بری

    Hafiz Saeed's JuD Case: ممبئی حملے (Mumbai Attack) کے ماسٹر مائنڈ دہشت گرد حافظ سعید (Hafiz Saeed) کی تنظیم جماعت الدعوۃ (Jamat-ud-Dawah) کے 6 لیڈروں کو لاہور ہائی کورٹ (Lahore High Court) نے بری کر دیا ہے۔ 2008 میں ممبئی میں ہوئے بم دھماکوں میں 166 لوگوں کی موت ہوگئی تھی۔ حملے میں مرنے والوں میں 6 امریکی بھی شامل تھے۔

    • Share this:
      لاہور: ممبئی حملے (Mumbai Attack) کے ماسٹر مائنڈ دہشت گرد حافظ سعید (Hafiz Saeed) کی تنظیم جماعت الدعوۃ (Jamat-ud-Dawah) کے 6 لیڈروں کو لاہور ہائی کورٹ (Lahore High Court) نے بری کردیا ہے۔ دہشت گردوں کو اقتصادی مدد پہنچانے کے معاملے میں ممنوعہ تنظیم کے لیڈروں کو ملزمین سے بری کیا گیا ہے۔ 2008 میں ممبئی میں ہوئے بم دھماکوں میں 166 لوگوں کی موت ہوگئی تھی۔ حملے میں مرنے والوں میں 6 امریکی بھی شامل تھے۔ حافظ سعید کی قیادت والے جماعت الدعوۃ کے تار دہشت گردانہ گروپ لشکر طیبہ (Lashkar-e-Taiba) سے منسلک ہوئے ہیں۔

      لاہورکی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 6 رہنماوں کو 9 سال کی قید کی سزا سنائی تھی۔ ان میں پروفیسر ملک ظفر اقبال، یحیٰ مجاہد، نصراللہ، سمیع اللہ اور عمر بہادر کا نام شامل ہے۔ ان کے علاوہ حافظ سعید کے رشتہ دار حافظ عبدالرحمن مکی کو 6 ماہ کے لئے جیل بھیجا گیا تھا۔ حافظ عبدالرحمن مکی کے خلاف یہ کارروائی پنجاب پولیس کے کاونٹر ٹیررازم ڈپارٹمنٹ کی طرف سے ایف آئی آر دائر ہونے کے بعد کی گئی تھی۔ ٹرائل کورٹ نے ان لیڈروں کو دہشت گردوں کو اقتصادی مدد پہنچانے کا ملزم پایا تھا۔ عدالت نے دہشت گردی کے ذریعہ حاصل کئے روپیوں سے بنائی گئی جائیداد کو بھی ضبط کرنے کے احکامات دیئے تھے۔

      پی ٹی آئی سے بات چیت میں عدالت کے افسر نے بتایا،’ہفتہ کو چیف جسٹس محمد امیر بھٹی اور جسٹس طارق علیم شیخ کی ایل ایچ سی کی بینچ نے جماعت الدعوۃ کے 6 لیڈروں کے خلاف سی ٹی ڈی کی ایف آئی آر میں ٹرائل کورٹ کے فیصلے کو خارج کردیا،  کیونکہ کیس میں استغاثہ اپیل کنندگان کے خلاف شک سے بالاتر الزامات قائم کرنے میں نا کام رہا۔

      جماعت الدعوۃ کے وکیل نے لاہور ہائی کورٹ کو بتایا کہ الانفال ٹرسٹ، جس کے عرضی گزار رکن ہیں۔ اس کا ممنوعہ لشکر طیبہ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ لیڈروں کو لاہور ہائی کورٹ میں سخت سیکورٹی کے درمیان لایا گیا تھا۔ وہ لاہور کی لکھپت جیل میں بند تھے۔ امریکہ نے حافظ سعید کو عالمی دہشت گرد قرار دے رکھا ہے۔ 2008 میں اقوام متحدہ سلامتی کونسل تجویز کے تحت اسے دہشت گرد کے طور پر درج کیا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: