حج 2018 : وقوف عرفہ اور مزدلفہ میں شب گزاری کے بعد اب عازمین حج کے منیٰ پہنچنے کا سلسلہ جاری

رات بھر مزدلفہ میں قیام کے بعد لاکھوں عازمین حج اب خیموں کے شہر منیٰ میں دوبارہ پہنچ رہے ہیں۔

Aug 21, 2018 10:06 AM IST | Updated on: Aug 21, 2018 10:11 AM IST
حج 2018 : وقوف عرفہ اور مزدلفہ میں شب گزاری کے بعد اب عازمین حج کے منیٰ پہنچنے کا سلسلہ جاری

سعودی عرب میں مناسک حج کا باقاعدہ آغاز ہوگیا ہے اور لاکھوں عازمین منیٰ کی جانب رواں دواں ہیں۔ فائل فوٹو۔

کل یعنی نو ذی الحجہ کو وقوف عرفہ کی ادائیگی اور پھر رات بھر مزدلفہ میں قیام کرنے کے بعد حجاج کرام آج فجر کی نماز کے بعد مزدلفہ سے واپس منی پہنچ رہے ہیں۔ میدان عرفات میں وقوف کے دوران عازمین حج نے مسلسل تکبیر وتہلیل میں وقت گزارا۔ وہ رو رو کر اللہ تعالی سے اپنے گناہوں کی معافی مانگتے رہے اور اپنے اہل خانہ اور ملک کی خوشحالی کی دعائیں کرتے رہے۔ غروب آفتاب کے بعد سارے عازمین حج مزدلفہ روانہ ہو گئے۔ مزدلفہ پہنچنے کا یہ سلسلہ دیر رات تک جاری رہا۔

عازمین حج نے رات بھر مزدلفہ میں قیام کیا اور یہاں بھی وہ ذکر واذکار میں زیادہ تر وقت مصروف رہے۔ یہاں انہوں نے بڑے شیطان کو علامتی طور پر مارنے کے لئے کنکریاں چنیں۔ فجر کی نماز کے بعد اب وہ منی کی جانب گامزن ہوئے اور اب وہاں پہنچ رہے ہیں۔ مزدلفہ سے منی کا فاصلہ تقریباً نو کلومیٹر ہے۔

آج یعنی دس ذی الحجہ کو سنت ابراہیمی کے ساتھ عید قرباں منائی جا رہی ہے۔ حجاج دوبارہ منی پہنچنے کے بعد پہلے بڑے شیطان کو کنکریاں ماریں گے اور قربانی کی رسم پوری ہو جانے کے بعد عازمین اپنے سروں کے بال منڈوا کر یا کتروا کر احرام کھول دیں گے اور عام کپڑوں میں مکہ معظمہ جائیں گے۔

یہاں وہ طواف افاضہ کریں گے جن میں خانہ کعبہ کا سات مرتبہ طواف اور صفا ومروہ کی سات مرتبہ سعی کرنا شامل ہے۔ طواف افاضہ  حج کے رکن میں سے ہے۔ اس کے بعد پھر وہ منی واپس آ جائیں گے۔ ان مناسک کے بعد بھی عازمین مزید دو یاتین راتیں منی میں ہی گزاریں گے۔

Loading...

دریں اثنا،اب تک مناسک حج کی ادائیگی کے دوران کہیں سے کسی ناخوشگوار واقعہ کی کوئی خبر نہیں ملی ہے۔ اس موقع پر حکومت سعودی عرب نے سیکورٹی کے فول پروف انتظامات کئے ہیں۔ ہیلی کاپٹروں سے نگرانی کا عمل مسلسل جاری ہے۔

Loading...