உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Father's Day: یوم والد کےموقع پرخاص پیشکش! ’’والدجیسی شخصیت دنیامیں کوئی نہیں‘‘

    والد کی شخصیت کا ہماری زندگی پر دیرپا اثر پڑتا ہے۔

    والد کی شخصیت کا ہماری زندگی پر دیرپا اثر پڑتا ہے۔

    ہمیں والد بچپن کی ہر ضرورت پورا کرنے کے ساتھ ساتھ ہمیشہ خوش رکھتے ہیں۔ جب بھی ہمیں اپنی زندگیوں میں ایک خاص سپورٹ کی ضرورت پڑی، تو وہ والد ہی ہوتے ہیں، جو ہمارا سہارا فراہم کرتے ہیں۔

    • Share this:
      جب آپ اپنے والد کو دیکھتے ہیں، تو آپ کے ذہن میں کئی سارے جذبات اور احساسات امنڈتے ہیں۔ والد کی شخصیت ہر شخص کی زندگی میں اہم ہوتی ہے۔ والد کا سایہ ہر کسی کے لیے شجر دار درخت کے مانند ہوتا ہے، جب کہ سخت دھوپ اور تیز ہوائیں آئی تب بھی درخت کے سایہ میں پر کیف فضائیں میسر آتی ہے۔ اسی طرح والد کی بھی شخصیت ہوتی ہے۔

      ہمیں والد بچپن کی ہر ضرورت پورا کرنے کے ساتھ ساتھ ہمیشہ خوش رکھتے ہیں۔ جب بھی ہمیں اپنی زندگیوں میں ایک خاص سپورٹ کی ضرورت پڑی، تو وہ والد ہی ہوتے ہیں، جو ہمارا سہارا فراہم کرتے ہیں۔

      یوم والد 2022 کے موقع پر اہم اقتباسات پیش ہیں:

      ہمیشہ چند لوگ ایسے ہوں گے جن میں ہمت ہوتی ہے کہ وہ محبت کریں جو ہمارے اندر موجود نہیں ہے۔ ان لوگوں میں سے ایک ہمارے والد ہیں۔

      اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا ہے کہ آپ کتنے ہی چھوٹے تھے، جب والد نے کہا کہ میں تم سے پیار کرتا ہوں‘ تب وہ لمحہ ہر ایک کے لیے بہت ہی خاص ہوتا ہے۔
      باپ بننا ہمیشہ صاف آسمان اور ہموار جہاز رانی نہیں ہوتا ہے۔ لیکن سفر کا ہر حصہ اتار چڑھاؤ اور درمیان میں اسے اور بھی زیادہ معنی خیز مہم جو بنا دیتا ہے۔

      ایک باپ کی محنت سے بہتر، مستحکم اور باوقار خاندان بننے میں مدد ملتی ہے۔

      مزید پڑھیں: دہلی میں پھر Covid-19 کا قہر، 10 دنوں میں 7 ہزار کیسیز، انفیکشن کی شرح میں بھی اچھال

      ایک والد کے پاس اونچا اٹھانے کے لیے بازو، پیار کرنے کے لیے دل، سہارا دینے کے لیے کندھے، یقین دلانے کے لیے مسکراہٹ، آپ کو دنیا میں بھیجنے کے لیے برکت کا ہاتھ، گھر واپسی پر آپ کا استقبال کرنے کے لیے گرمجوشی سے گلے لگانا سب کچھ ہوتا ہے۔

      مزید پڑھیں: UP Violence: جمعہ کی نماز سے پہلے پورے اترپردیش میں ہائی الرٹ، چپے چپے پر سیکورٹی فورسز کا پہرہ

      ایک والد اپنے خاندان کی حفاظت کے لیے طاقت، ان کی رہنمائی کے لیے حکمت سے لبریز ہوتا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: