فریضہ حج کا آغاز، لاکھوں عازمین حج آج منی پہنچ رہے ہیں

مکہ مکرمہ۔ پوری دنیا سے مکہ مکرمہ پہنچنے والے لاکھوں عازمین حج منی میں پہنچنا شروع ہو گئے ہیں۔

Sep 22, 2015 08:16 AM IST | Updated on: Sep 22, 2015 08:47 AM IST
فریضہ حج کا آغاز، لاکھوں عازمین حج آج منی پہنچ رہے ہیں

مکہ مکرمہ، ایجنسیاں۔  پوری دنیا سے مکہ مکرمہ پہنچنے والے لاکھوں عازمین حج منی میں پہنچنا شروع ہو گئے ہیں۔ یہ عازمین حج کے پہلے رکن کی ادائیگی کے لئے سفید احرام میں ملبوس لبیک اللھم لبیک کی صدائیں بلند کرتے ہوئے منی پہنچ رہے ہیں۔ جب کہ حج کا رکن اعظم وقوف عرفہ منگل کو یعنی کل ادا کیا جائے گا اور حج کے امام مسجد نمرہ سے حج کا خطبہ دیں گے۔

خیموں کی اس وادی میں تقریباً تیس لاکھ سے زائد عازمین حج آج یہاں قیام کریں گے اور ذکر واذکار اورعبادت وریاضت میں مصروف رہیں گے۔ اس سال ڈیڑھ لاکھ ہندستانی عازمین حج کی سعادت سے سرفراز ہوں گے۔

Loading...

یہ روح پرور عالمی اجتماع اسلام کے پانچ بنیادی ارکان میں سے ایک ہے جو ہر اس مسلمان پر فرض ہے جو مالی وجسمانی طاقت رکھتا ہو۔ حج کے زیادہ تر ارکان حضرت ابراہیم علیہ السلام کی سنت پر مبنی ہیں۔ ایک طرف طواف کعبہ ہے تو دوسری طرف صفا اور مروہ کی پہاڑیوں کو تیز گامی سے طے کرنا ہے جو کہ بی بی ہاجرہ کی سنت ہے۔

عازمین حج منگل کو منی میں قیام کرنے کے بعد بدھ کوفجر کی نماز کے بعد میدان عرفات کے لئے روانہ ہو جائیں گے۔ نویں ذی الحجہ کو یعنی کل وقوف عرفہ ہے جو حج کا رکن اعظم ہے۔ یہاں ظہر اور عصر کی نماز ادا کی جائے گی اور عازمین بارگاہ ایزدی میں رو رو کر اور گڑگڑا کر دعا مانگیں گے۔ اس کے بعد مغرب کے وقت مغرب کی نماز ادا کئے بغیر مزدلفہ کی جانب رواں دواں ہو جائیں گے۔ مزدلفہ پہنچ کر مغرب اور عشا کی نماز ایک ساتھ پڑھیں گے اور رات بھر یہیں قیام کریں گے۔ عازمین حج یہیں کنکریاں جمع کریں گے اور اگلے دن دس ذی الحجہ کو یعنی جمعرات کو بعد نماز فجر عازمین مزدلفہ سے منی کی جانب کوچ کریں گے ۔ یہاں پہنچ کر وہ قربانی کریں گے ، بڑے شیطان کو کنکریاں ماریں گے ، سر حلق کروائیں گے اور اس کے بعد احرام کھول دیں گے۔  اس کے بعد خانہ کعبہ کا طواف اور صفا ومروہ کی سعی کریں گے۔ اس طواف کو طواف افاضہ کہا جاتا ہے جو حج کے ارکان میں سے ہے۔

دریں اثنا، حج کے دوران سیکورٹی کے پختہ انتظامات کئے گئے ہیں۔ سعودی حکومت نے انتباہ دیا ہے کہ یہاں کسی کو بھی شرپسندی کرنے کا موقع نہیں دیا جائے گا۔ منی میں عازمین کے قیام کے لئے لاکھوں خیمے نصب کئے گئے ہیں۔

خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز نے حکام کو واضح ہدایت دی ہے کہ وہ مہمانان خدا کے لئے ہر طرح کی سہولت فراہم کریں تاکہ وہ پورے خشوع وخضوع کے ساتھ عبادات کر سکیں۔ حج انتظامات کی سیکورٹی کی ذمہ دار سعودی وزارت داخلہ نے ایک لاکھ سیکورٹی اہلکاروں کی تعیناتی کے علاوہ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں پانچ ہزار سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرائے ہیں۔

Loading...