உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بیوی سے جھگڑا، باپ نے بیٹی کو واشنگ مشین میں ڈالا اور غصے میں کر دیا بٹن آن، جانیں پھر کیا ہوا

     ماہرین یہ بھی کہتے ہیں کہ غصے میں کوئی فیصلہ نہ کیا جائے۔ دراصل اس غصے سے امریکہ کے نیو ہیمپشائر (New Hampshire) میں رہنے والے ایک شخص نے اپنے 2 سالہ معصوم  بچے کو اپنے ہی ہاتھوں سے موت کے گھاٹ اتارنے کا فیصلہ کیا۔

    ماہرین یہ بھی کہتے ہیں کہ غصے میں کوئی فیصلہ نہ کیا جائے۔ دراصل اس غصے سے امریکہ کے نیو ہیمپشائر (New Hampshire) میں رہنے والے ایک شخص نے اپنے 2 سالہ معصوم بچے کو اپنے ہی ہاتھوں سے موت کے گھاٹ اتارنے کا فیصلہ کیا۔

    ماہرین یہ بھی کہتے ہیں کہ غصے میں کوئی فیصلہ نہ کیا جائے۔ دراصل اس غصے سے امریکہ کے نیو ہیمپشائر (New Hampshire) میں رہنے والے ایک شخص نے اپنے 2 سالہ معصوم بچے کو اپنے ہی ہاتھوں سے موت کے گھاٹ اتارنے کا فیصلہ کیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      غصے میں انسان صحیح اور غلط میں فرق کرنے کی سمجھ کھو دیتا ہے۔ کبھی ۔ کبھی تھوڑی دیر کے ہی غصے میں انسان اتنی بڑی غلطیاں کر جاتا ہے  جس کے لیے اسے شاید ساری زندگی پچھتانا پڑتا ہے۔ اسی لیے ماہرین یہ بھی کہتے ہیں کہ غصے میں کوئی فیصلہ نہ کیا جائے۔ دراصل اس غصے سے امریکہ کے نیو ہیمپشائر (New Hampshire) میں رہنے والے ایک شخص نے اپنے 2 سالہ معصوم  بچے کو اپنے ہی ہاتھوں سے موت کے گھاٹ اتارنے کا فیصلہ کیا۔ اس شخص نے بیٹی کو واشنگ مشین میں ڈال اور  (Father Puts Daughter in Washing Machine)  اس کا بٹن آن کر دیا۔

      father puts daughter in washing machine
      نیویارک پوسٹ  (NewYork Post)  میں شائع ہونے والی خبر کے مطابق پولیس نے مائیکل کو گرفتار کر لیا ہے۔ اس پر بچے کی جان لینے کا الزام ہے۔ بچی کی ماں نے پولیس کو یہ اطلاع دی۔ اصل میں مانچسٹر سے تعلق رکھنے والا ، مائیکل اپنی بیوی سے کسی بات پر جھگڑا کر رہا تھا۔ اس غصے میں اس نے اپنی بیٹی کو اٹھایا اور واشنگ مشین میں ڈال دیا۔ وہ تو اچھا ہوا کہ بچی کی ماں نے وقت پر مشین بند کر دی۔ اس کے بعد لڑکی کو باہر نکالا گیا۔ پولیس کے مطابق لڑکی کو زیادہ چوٹ نہیں آئی لیکن وہ ابھی تک اسپتال میں داخل ہے۔

      father puts daughter in washing machine

      پولیس نے مائیکل کے خلاف فوجداری کا مقدمہ درج کرلیا ہے۔ بتادیں کہ گزشتہ دنوں میں امریکہ میں بچوں کے خلاف جرائم کے کئی کیس دیکھے گئے ہیں۔ کچھ عرصہ پہلے ٹیکساس میں ایک چار سالہ بچی کورونا سے مر گئی تھی۔ لڑکی کی ماں نے اپنے خاندان کے کسی فرد کو ویکسین لینے کی اجازت نہیں دی۔ اس کے خاندان کے بہت سے لوگوں کو کورونا ہو گیا لیکن کسی نے ڈاکٹر سے کوئی مشورہ نہیں لیا۔ اس دوران لڑکی کی صحت بگڑ گئی۔ بالآخر اس جی کورونا کی وجہ سے موت ہو گئی۔ بیٹی کی موت کے بعد خاتون نے اپنی غلطی قبول کی اور سب سے درخواست کی کہ وہ ویکسین لیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: