உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایرانی طیارہ میں بم کی اطلاع ملتے ہی ایکشن میں آئی اے ایف، پیچھے لگا دیئے اپنے 2 سخوئی جیٹ

    ایرانی طیارہ میں بم کی اطلاع ملتے ہی ایکشن میں آئی اے ایف

    ایرانی طیارہ میں بم کی اطلاع ملتے ہی ایکشن میں آئی اے ایف

    ہندوستانی فضائیہ (Indian Air Force) پیر کی صبح اس وقت حرکت میں آگئی، جب انڈین ایئر اسپیس کے اوپر سے گزر رہی ایرانی پیسنجر فلائٹ (Mahan Air Flight) میں بم پلانٹ ہونے کی دھمکی ملی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      نئی دہلی: ہندوستانی فضائیہ (Indian Air Force) پیر کی صبح اس وقت حرکت میں آگئی، جب انڈین ایئر اسپیس کے اوپر سے گزر رہی ایرانی پیسنجر فلائٹ (Mahan Air Flight) میں بم پلانٹ ہونے کی دھمکی ملی۔ ایران کی پرائیویٹ ایئرلائنس کمپنی مہان ایئر کی یہ فلائٹ تہران سے چین کے گوانجھو (Mahan Air Tehran to Guangzhou Flight) جارہی تھی۔ نیوز ایجنسی اے این آئی کے مطابق، فلائٹ کے چیف پائلٹ نے دہلی کے آئی جی آئی ایئر پورٹ پر ایمرجنسی لینڈنگ کی اجازت مانگی۔ ایئر ٹریفک کنٹرول روم نے پائلٹ کو فلائٹ جے پور ایئر پورٹ پر لینڈ کرانے کی اجازت دی، لیکن اس نے منع کردیا۔ کچھ دیر بعد مہان ایئر کی یہ فلائٹ ہندوستانی فضائیہ علاقے سے باہر نکل کر چیف کی طرف بڑھ گئی۔

      ایرانی فلائٹ میں بم پلانٹ ہونے کی اطلاع ملتے ہی ہندوستانی سیکورٹی ایجنسیاں محتاط ہوگئیں۔ انڈین ایئر فورس نے بغیر کسی تاخیر کے پنجاب اور جودھپور ایئر بیس سے 2 سخوئی جنگجو طیارہ (IAF Su-30MKI Fighter Jets) کو ایرانی فلائٹ کے پیچھے لگا دیا۔ ہندوستانی فضائیہ علاقے سے باہر نکلنے تک دونوں سخوئی جیٹ اس فلائٹ پر نگرانی رکھے ہوئے تھے۔ چین کی طرف جانے کے باوجود ہندوستانی سیکورٹی ایجنسیاں اور ہندوستانی فضائیہ ایرانی فلائٹ کو ٹریک کرتے رہے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      زمین سے کی فائرنگ، 3500 فٹ کی اونچائی پر ہوائی جہاز میں بیٹھے شخص کو لگی گولی

      یہ بھی پڑھیں۔

      دو لوگوں پر لگایا 10 بار آبروریزی کرنے کا جھوٹا الزام، اب اس خاتون کو ہوئی 5 سال کی جیل 

      اے این آئی کی رپورٹ کے مطابق، فلائٹ رڈار کے ڈیٹا سے پتہ چلا ہے کہ طیارہ نے ہندوستانی ہوائی علاقے سے باہر نکلنے سے پہلے دہلی-جے پور ہوائی علاقے میں اپنی اونچائی کو کچھ وقت کے لئے کم کر دیا تھا۔ اس بم کے خطرے کی نوعیت واضح نہیں ہے اور سیکورٹی ادارے مزید تفصیلات جمع کرنے کے لئے کام کر رہے ہیں۔

      ہندوستانی فضائیہ نے جاری کیا بیان

      ہندوستانی فضائیہ نے ایک بیان میں کہا، ’3 اکتوبر، 2022 کو ایرانی رجسٹریشن والی ایک مسافر طیارہ پر بم ہونے کی اطلاع ملی۔ طیارہ اس وقت ہندوستانی ہوائی علاقے سے گزر رہا تھا۔ آئی اے ایف کے فائٹر ایئر کرافٹس نے محفوظ دوری پر رہتے ہوئے اس طیارہ کا پیچھا کیا۔ ایرانی طیارہ کو جے پور اور پھر چندی گڑھ میں اترنے کا متبادل دیا گیا تھا۔ حالانکہ پائلٹ نے دونوں میں سے کسی بھی ہوائی اڈے پر ایمرجنسی لینڈنگ سے منع کردیا۔ کچھ وقت بعد، تہران سے بم کی دھمکی کو نظر انداز کرنے کی اطلاع ملی، جس کے بعد طیارہ اپنے آخری مقام کی طرف بڑھنے لگا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: