உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    افغانستان پر قبضے کے بعد بھی کنگال رہے گا طالبان، آئی ایم ایف نے کر ڈالا ایسا کام

    Youtube Video

    آئی ایم ایف (International Monetary Fund) نے کہا ہے کہ طالبان کے زیر قبضہ افغانستان (Afghanistan) اب اپنے وسائل استعمال نہیں کر سکے گا اور نہ ہی انہیں کوئی نئی مدد دی جائے گی۔

    • Share this:
      کابل: طالبان (Taliban) کو ایک اوربڑا جھٹکا لگا ہے۔ حال ہی میں ، امریکہ نے نو اعشاریہ پانچ بلین ڈالر یعنی سات سو چھ ارب روپے کے اثاثے منجمد کیے تھے ، جس کے بعد اب آئی ایم ایف یعنی بین الاقوامی مالیاتی فنڈ نے اپنے وسائل کے استعمال پر پابندی لگا دی ہے۔ آئی ایم ایف (International Monetary Fund) نے کہا ہے کہ طالبان کے زیر قبضہ افغانستان (Afghanistan) اب اپنے وسائل استعمال نہیں کر سکے گا اور نہ ہی انہیں کوئی نئی مدد دی جائے گی۔ آئی ایم ایف (IMF) نے چار سو ساٹھ ملین ڈالر یا تقریبا تین ہزار چار سو کروڑ روپے کے ہنگامی ریزرو تک افغانستان کی رسائی روک دی ہے۔ یہ فیصلہ طالبان کے قبضے کے بعد ملک کے مستقبل کے بارے میں غیر یقینی صورتحال کے پیش نظر کیا گیا ہے۔
      نیوز ایجنسی اے این آئی (ANI) نے میڈیا رپورٹس کے حوالے سے یہ معلومات دی۔ آئی ایم ایف (IMF) نے 460 ملین امریکی ڈالر یا 46 ملین ڈالر (3416.43 کروڑ روپے) کے ہنگامی ذخائر تک افغانستان کی رسائی روکنے کا اعلان کیا ہے۔ ملک پر طالبان کے قبضے نے افغانستان کے مستقبل کے لیے غیر یقینی صورتحال پیدا کر دی ہے۔ اسی لیے آئی ایم ایف نے یہ فیصلہ کیا۔ آئی ایم ایف نے کہا کہ طالبان کے قبضے والا افغانستان اب آئی ایم ایف کے وسائل استعمال نہیں کر سکے گا۔ نہ ہی اسے کوئی نئی مدد ملے گی۔
      امریکہ نے فریز کی 706 ارب سے زیادہ کی املاک
      نیو یارک ٹائمس کی رپورٹ کے مطابق آئی ایم ایف نے یہ فیصلہ جو بائیڈن انتظامیہ کے دباؤ کے بعد کیا ہے۔ منگل کے رو ، امریکہ America نے افغانستان کے سینٹرل ینک کی تقریبا 9.5 بلین ڈالر یا 706 ارب روپے سے زیادہ کی املاک فریز کر دی ہے۔ یہی نہیں امریکہ نے افغانستان کو نقد رقم کی سپلائی بھی روک دی ہے تاکہ ملک کا پیسہ طالبان کے ہاتھوں میں نہ جائے۔
      طالبان نے ہندستان سے امپورٹ۔ایکسپورٹ پر لگائی پابندی
      غورطلب ہے کہ طالبان (Taliban) کی آمد کے ساتھ ہی بھارت (India) کے افغانستان کے ساتھ تجارتی سطح پر تعلقات خراب ہونے کے آثار ملنے لگے ہیں۔ فیڈریشن آف انڈین ایکسپورٹ آرگنائزیشن ایف آئی ای او (FIEO) کے ڈی جی ڈاکٹر اجے سہائے (Dr. Ajay Sahai) نے بتایا ہے کہ طالبان نے پاکستان (Pakistan) کے ٹرانزٹ روٹ سے کارگو کی نقل و حرکت پر پابندی عائد کر دی ہے ،جس سے ملک میں درآمدات بند ہو گئی ہیں۔ طالبان نے اتوار کو کابل پر قبضے کے بعد ہندستان کے ساتھ تمام امپورٹ ۔ ایکسپورٹ پوری طرح بند کر دی ہیں۔

      افغانستان کی تازہ صورتحال کی وجہ سے ہندوستان اور افغانستان کے درمیان درآمدات اور برآمدات کافی برا اثر پڑا ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان ہونے والی امپورٹ ۔ ایکسپورٹ پوری طرح بندہے۔ فیڈریشن آف انڈین اکسپورٹ آرگنائزیشن کے مطابق پاکستان کے ٹرانزٹ روٹ سے آمد ورفت پر پابندی عائد ہے جس کی وجہ سے درآمدات بند ہے۔ ایف آئی ای او (FIEO) کے ڈی جی کے مطابق ہندوستان چینی ، دواسازی ، چائے ، کافی ، مصالحے اور ٹرانسمیشن ٹاور افغانستان کو برآمد کرتا ہے۔ ساتھ ہی خشک میوہ جات اور پیاز جیسی چیزیں افغانستان سے درآمد کی جاتی ہیں۔ تاہم ، انہوں نے امید ظاہر کی کہ تجارت سے متعلق سرگرمیاں جلد ہی شروع کی جائیں گی کیونکہ یہ دونوں ممالک کے لیے ضروری اور فائدہ مند ہے۔ امید ہے کہ افغانستان میں سیاسی استحکام آنے کے بعد سب کچھ ٹھیک ہو جائے گا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: