உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Pakistan : عمران خان نے بنایایہ نیاریکارڈ، تحریک ِعدم اعتماد میں شکست کھانےوالے پہلےپاکستانی پی ایم

    Youtube Video

    Imran Khan New Record:عمران خان ،پاکستان کی تاریخ کے وہ پہلے وزیراعظم بن گئے ہیں جنہیں تحریک عدم اعتماد کے ذریعے اقتدار سے بے دخل کیا گیا۔ پاکستان میں حکومت کے سربراہ کو ہٹانے کا واحد آئینی طریقہ عدم اعتماد کی تحریک ہے۔ ملک کی 75 سالہ تاریخ میں کسی پاکستانی وزیر اعظم نے پانچ سال کی عی پوری نہیں کی۔

    • Share this:
      اسلام آباد: پاکستان کے وزیراعظم عمران خان(PM Imran Khan) کو اپوزیشن نےنیشنل اسمبلی میں تحریک ِعدم اعتماد (No Motion Confidence)پر ووٹنگ کے ذریعے اقتدار سے بے دخل کردیا۔ عمران خان کی حکومت کے خلاف اپوزیشن کی تحریک عدم اعتماد کونیشنل اسمبلی(National Assembly) سے منظور کرانے کے لیے 342 رکنی ایوان میں 172 ووٹ درکار تھے۔ اس تحریک عدم اعتماد کی 174 ارکان نے حمایت کی۔ عمران خان نے 9 اپریل کو قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 'میں امپورٹڈ حکومت قبول نہیں کروں گا۔ میں لڑنے کے لیے تیار ہوں۔ اس سے قبل 3 اپریل کو عمران خان نےنیشنل اسمبلی کو تحلیل کرنے اور پاکستان میں قبل از وقت انتخابات کرانے کی کوشش کی لیکن سپریم کورٹ کے ایک فیصلے نے انہیں تحریک ِعدم اعتماد کے ساتھ آگے بڑھنے کا حکم صادر کیا۔

      پاکستان کی نیشنل اسمبلی میں عمران خان کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک منظور ہونے کے بعد قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کہا کہ 'ہم انتقام نہیں لیں گے۔ ہم لوگوں کو جیلوں میں نہیں ڈالیں گے لیکن قانون اپنا راستہ اختیار کرے گا ۔۔ اس بات کا قوی امکان ہے کہ 11 اپریل کو ہونے والے پاکستانی پارلیمنٹ کے اجلاس میں شہباز شریف کو ملک کا اگلا وزیر اعظم منتخب کر لیا جائے گا۔ شہباز شریف (Shahbaaz Sharief)تین بار پی ایم رہے چکے سابق وزیراعظم نواز شریف کے چھوٹے بھائی ہیں۔ وہ خود دو بار صوبہ پنجاب کے وزیر اعلیٰ رہ چکے ہیں۔ متحدہ اپوزیشن نے انہیں 3 اپریل کو ہی وزارت عظمیٰ کا امیدوار منتخب کیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Women Junior hockey World Cup: ماں لگاتی ہے سبزی کا ٹھیلا، بیٹی ممتاز خان جونیئر ہاکی ورلڈ کپ میں کر رہی کمال

      اب دلچسپ تاریخ کا حصہ بن گئے ہیں عمران خان

      عمران خان ،پاکستان کی تاریخ کے وہ پہلے وزیراعظم بن گئے ہیں جنہیں تحریک عدم اعتماد کے ذریعے اقتدار سے بے دخل کیا گیا۔ پاکستان میں حکومت کے سربراہ کو ہٹانے کا واحد آئینی طریقہ عدم اعتماد کی تحریک ہے۔ ملک کی 75 سالہ تاریخ میں کسی پاکستانی وزیر اعظم نے پانچ سال کی مدت پوری نہیں کی۔ صرف 3 وزرائے اعظم یوسف رضا گیلانی (2008 سے 2012)، نواز شریف (2013 سے 2017) اور عمران خان (2018 سے 2022) 4 سال تک پاکستان میں حکومت کے سربراہ رہے ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ پاکستان کی تاریخ میں صرف 2 بار منتخب پارلیمنٹ نے اپنی معیاد پوری کی۔ پاکستان میں زیادہ تر حکومتیں بغاوت کی وجہ سے گریں۔ جنرل ضیاء الحق (11 سال تک) اور جنرل پرویز مشرف (9 سال تک) وہ دو فوجی حکمران ہیں جنہوں نے پاکستان کی حکومت کے سربراہ کی حیثیت سے سب سے زیادہ وقت اقتدار میں گزارا ہے۔

      آپ کو بتاتے چلیں کہ عمران خان نے امریکہ پر الزام لگایاہے کہ وہ اپوزیشن کے ساتھ مل کر انہیں اقتدار سے ہٹانے کی سازش کر رہا ہے۔ تاہم امریکہ نے پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کی تردید کی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Women's World Cup-2022: ایک ہاتھ سے لیا ایسا کیچ، ویڈیو دیکھ کر ایش: ت گارڈنر کو کریں گے سلام

      عمران خان کے مطابق وہ ایک آزاد خارجہ پالیسی پر عمل پیرا ہیں، جو پاکستانی کمیونٹی کے مفاد میں تھی۔ لیکن امریکہ اور مغربی ممالک نے ان کی حکومت کی آزاد خارجہ پالیسی پر اعتراض کیا تو انہیں اقتدار سے ہٹانے کی سازش کی گئی۔ عمران خان نے اس موقع پر ہندوستان کی آزاد خارجہ پالیسی کی تعریف کی۔ انہوں نے کہا کہ دنیا کے کسی ملک میں اتنی ہمت نہیں کہ وہ اپنی خارجہ پالیسی پر ہندوستان کو علم دے سکے۔ انہوں نے ہندوستان کو ایک بے لوث قوم قرار دیا۔
      Published by:Mirzaghani Baig
      First published: