کشمیرپرپاکستانی وزیراعظم عمران خان کی بوکھلاہٹ، بلیک کی ٹوئٹرکی ڈی پی

عمران خان ابھی بھی مودی حکومت کے جموں وکشمیرسےآرٹیکل -370 ہٹانے کے فیصلے پر بوکھلائے ہوئے ہیں۔ یوم آزادی پرپاکستان کے وزیراعظم عمران خان نےٹوئٹرپراپنی ڈی پی کو کالا کردیا ہے۔

Aug 15, 2019 10:17 PM IST | Updated on: Aug 15, 2019 10:18 PM IST
کشمیرپرپاکستانی وزیراعظم عمران خان کی بوکھلاہٹ، بلیک کی ٹوئٹرکی ڈی پی

ہندوستان کی یوم آزادی کےموقع پرپاکستان کے وزیراعظم عمران خان نےکالی کی ڈی۔

ہندوستان اپنا 73 واں یوم آزادی منا رہا ہے۔ ہندوستان میں لوگ ترنگا پھہررہے ہیں اور خوشیاں منا رہے ہیں، وہیں دوسری طرف پاکستان وزیراعظم عمران خان ابھی بھی مودی حکومت کے جموں وکشمیرسےآرٹیکل -370 ہٹانے کے فیصلے پربوکھلائے ہوئے ہیں۔ یوم آزادی پرپاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے ٹوئٹرپراپنی ڈی پی کو کالا کردیا ہے۔

عمران خان ہی نہیں پاکستان کے سبھی سرکاری تنظیموں اورلیڈروں نے اپنی ڈی پی کوکالا ہوا ہے۔ اسی کےساتھ عمران خان نے جمعرات کوکہا کہ اگرعالمی برادری نے اس طرف توجہ نہیں دیا توپوری دنیا کےمسلمانوں میں شدت پسندی میں اضافہ ہوگا اورتشدد کا دورچل پڑے گا۔

Loading...

pak

عمران خان نے کہا 'کیا دنیا خاموشی کے ساتھ کشمیرمیں سریبینکا جیسا قتل عام اورنسلی صفایا دیکھتی رہےگی؟ میں بین الاقوامی طبقے کووارننگ دینا چاہتا ہوں کہ اگریہ ہونےدیا گیا تواس کےسنگین نتائج ہوں گے۔ اس کا ردعمل میں مسلم دنیا میں شدت پسندی میں اضافہ ہوگا اورتشدد کا چکرچلنےلگےگا'۔

Imran-Khan-3

بلوچستان میں اٹھی آزادی کی آواز

جہاں ایک طرف پاکستان پوری دنیا میں کشمیرپرہندوستانی حکومت کےذریعہ اٹھائے گئے قدم کا رونا رورہا ہے۔ وہیں دوسری طرف بلوچستان میں لوگ پاکستان سےآزادی کی آوازاٹھا رہےہیں۔ ہندوستان کی یوم آزادی پربلوچستان صوبہ کے لوگوں نے ہندوستانیوں کو مبارکباد دی اورساتھ ہی جےہند کےنعرے بھی لگائے۔ بلوچستان کےلوگوں نےہندوستانی حکومت سےمطالبہ کیا ہے کہ ہندوستان انہیں آزادی دلانے میں مدد کرے۔

Imran-Khan-4

ہندوستان کے تعاون کی ضرورت

بلوچستان کارکنان نے ہندوستان سے گزارش کی کہ ہندوستان اسے پاکستانی حکومت سے بچائےاورانہیں آزادی دلانے میں تعاون کرے۔ بلوچ کارکنان نے کہا کہ انہیں آزادی کےلئے ہندوستانی حکومت کا تعاون اورحمایت کی ضرورت ہے۔

Loading...