உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایران - سعودی عرب کےدرمیان ثالثی کا کردارادا کریں گے عمران خان

    عمران خان ادا کریں گے سعودی عرب اور ایران کے درمیان ثالثی کا کردار

    عمران خان ادا کریں گے سعودی عرب اور ایران کے درمیان ثالثی کا کردار

    عمران خان نے ستمبرمیں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرنےکےبعد کہا تھا کہ امریکہ اورسعودی عرب نے ریاض اورایران کے درمیان کشیدگی کوکم کرنےکےلئے ثالثی کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ اس کے بعد ہی عمران خان کے دورے طے کئے گئے ہیں۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      ریاض: ایران اور سعودی عرب کے درمیان بڑھتی کشیدگی کوکم کرنےکے لئےاپنی ثالثی کوششوں کےتحت پاکستان کے وزیراعظم عمران خان اتواركوریاض پہنچ رہےہیں۔ عمران خان سعودی عرب کےعلاوہ ایران کے سرکاری دورہ پر بھی تہران جا رہے ہیں۔ ان کے ایجنڈے میں علاقے میں کشیدگی کم کرنے کے لئے راستہ تلاش کرنےکولےکرتبادلہ خیال کرنا شامل ہے۔

      عمران خان نے ستمبرمیں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرنےکےبعد کہا تھا کہ امریکہ اورسعودی عرب نے ریاض اورایران کے درمیان کشیدگی کوکم کرنےکےلئے ثالثی کرنےکا مشورہ دیا ہے۔ اس کے بعد ہی عمران خان کے دورے طے کئے گئے ہیں۔
      First published: