ہوم » نیوز » عالمی منظر

کشمیر موضوع پر پاکستان کو ملا سعودی عرب اور ایران سے بڑا جھٹکا، بیک فٹ پر عمران خان حکومت

سعودی عرب اور ایران (Saudi Arab And Iran) نے اپنے ملک میں واقع پاکستانی سفارت خانوں میں 27 اکتوبر کو جموں وکشمیر کے ہندوستان میں انضمام کے دن پر ’یوم سیاہ‘ منانے کی اجازت نہیں دی۔

  • Share this:
کشمیر موضوع پر پاکستان کو ملا سعودی عرب اور ایران سے بڑا جھٹکا، بیک فٹ پر عمران خان حکومت
کشمیر موضوع پر پاکستان کو ملا سعودی عرب اور ایران سے بڑا جھٹکا

اسلام آباد: پاکستانی وزیر اعظم عمران خان (PM Imran Khan) کو شیعہ اور سنی دونوں ہی گروپوں سے کشمیر کے موضوع پر بڑا جھٹکا لگا ہے۔ سعودی عرب اور ایران (Saudi Arab And Iran) نے اپنے ملک میں واقع پاکستانی سفارت خانوں کو 27 اکتوبر کو جموں وکشمیر کے ہندوستان میں انضمام کے دن پر ’یوم سیاہ‘ منانے کی اجازت نہیں دی۔ سعودی عرب اور ایران کے اپنے پچھلے رخ سے پیچھےہٹنے کے بعد مغربی ایشیا سے پاکستان کو بڑی مایوسی ہاتھ لگی ہے۔ ہندوستان ٹائمس کی رپورٹ کے مطابق، اس معاملے سے منسلک لوگوں نے بتایا کہ ایران میں پاکستانی سفارت خانہ نے تہران یونیورسٹی میں ’یوم سیاہ’ منانے کےلئے ایک تقریب منعقد کرنےکی تجویز پیش کی تھی۔ پاکستان کے اس قدم پر ایران نے حیران کُن طریقے سے اسلام آباد کو اجازت دینے سے انکار کردیا۔ اس کے بعد پاکستانی سفارت خانے کو صرف ایک آن لائن سیمینار کرنے کے لئے مجبور ہونا پڑا۔


ایران کے اس جھٹکے سے واضح ہوگیا کہ پاکستان آرٹیکل 370 کے خاتمے پر مسلم ممالک کی بھی حمایت حاصل کرنے میں ناکام ثابت ہو رہا ہے۔ یہی نہیں، پاکستان کے سعودی عرب کی راجدھانی ریاض میں پروگرام کے انعقاد کی اجازت نہیں ملی۔ تجزیہ نگاروں کا ماننا ہےکہ طاقتور مسلم ممالک سعودی عرب اور ایران سے پاکستان کو ملا جھٹکا اس علاقے میں بدلتےحالات کو واضح کرتا ہے۔ دراصل، کبھی سعودی عرب سے مالی مدد لینے والے پاکستان نے اب ترکی کو اپنا ’رہنما’ بنا لیا ہے۔ یہی نہیں پاکستانی وزیر خارجہ نے گزشتہ دنوں ترکی کے ساتھ مل کر سعودی عرب سے الگ ایک اور گروپ بنانے کا اشارہ دیا تھا۔ اس کا نتیجہ یہ ہوا کہ سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان رشتوں میں کشیدگی میں اضافہ ہوگیا ہے۔


پاکستان کو کشمیر موضوع پر سعودی عرب اور ایران کا بھی ساتھ نہ ملنے سے پاکستان کی عمران خان حکومت کو مایوسی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ فائل فوٹو
پاکستان کو کشمیر موضوع پر سعودی عرب اور ایران کا بھی ساتھ نہ ملنے سے پاکستان کی عمران خان حکومت کو مایوسی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ فائل فوٹو


ترکی اور سعودی عرب کے درمیان کشیدگی

اسی وجہ سے ترکی اور خود کو مسلمانوں کا قائد ماننے والے سعودی عرب دونوں سنی ممالک کے درمیان کشیدگی میں اضافہ ہوگیا ہے۔ پاکستان اور ترکی کے درمیان بڑھتی دوستی گزشتہ دنوں ایف اے ٹی ایف کی میٹنگ میں دیکھنے کو ملی تھی۔ ترکی واحد ایسا ملک تھا، جس نے پاکستان کو گرے لسٹ سے ہٹانےکی حمایت کی تھی۔ پاکستان اور ترکی آرمینیا- آذربائیجان کی جنگ میں کھل کر بوکو کی حمایت کر رہے ہیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 29, 2020 11:54 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading