உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بیرونی مہمانوں کو نہیں بلائیں گے عمران خان، سادگی سے ہوگی حلف برداری

    عمران خان: فائل فوٹو۔

    عمران خان: فائل فوٹو۔

    پی ٹی آئی کو قومی اسمبلی کے انتخابات میں 115 سیٹیں ملی ہيں اور وہ اہم اتحادی پارٹیوں اور آزاد امیدواروں کی حمایت سے حکومت سازی کی کوشش میں ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      اسلام آباد۔ پاکستان تحریک انصاف ( پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور وزیر اعظم (نامزد) عمران خان نے اپنی تقریب حلف برداری میں بیرونی مہمانوں کو دعوت نہ دینے اور سادگی سے حلف برداری کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پاکستانی روزنامہ اخبار ڈان نے آج اپنی رپورٹ میں بتایا کہ عمران خان نے تقریب حلف برداری میں سادگی اپنانے کا فیصلہ کیا ہے۔


      پی ٹی آئی کو قومی اسمبلی کے انتخابات میں 115 سیٹیں ملی ہيں اور وہ اہم اتحادی پارٹیوں اور آزاد امیدواروں کی حمایت سے حکومت سازی کی کوشش میں ہے، جس میں اس کے چیئرمین عمران خان پاکستان کے نئے وزير اعظم ہوں گے۔ پارٹی نے پہلے متعدد بیرونی اہم شخصیات اور سربراہان ممالک کو مدعو کرنے کا منصوبہ بنایا تھا، جن میں وزیر اعظم نریندر مودی، بالی ووڈ کے سپر اسٹار عامر خان، سابق کرکٹر کپّل دیو، سنیل گواسکر اور نوجوت سنگھ سدھو کے نام شامل ہونے کی قیاس آرائیاں کی جارہی تھیں اور  سدھو نے اس کو ذاتی دعوت نامہ قرار دے کر اس کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ حلف برداری کی تقریب میں شرکت کرنا ان کے لئے اعزاز ہوگا۔


      تاہم، عمران خان نے بظاہر اپنا من بدلتے ہوئے دھوم دھام والی تقریب نہ کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ پی ٹی آئی کے ترجمان فواد چودھری نے بتایا کہ پی ٹی آئي کے چیئرمین نے حلف برداری کی تقریب سادگی سے منعقد کرنے کی ہدایت دی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ عمران خان ایوان صدر میں ایک سادہ تقریب میں حلف لیں گے اور حلف برداری کی تقریب میں بیرونی شخصیات کو مدعو نہیں کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ یہ خالص قومی تقریب ہوگی، جس میں عمران خان کے چند قریبی دوستوں اور مقامی حکام کو مدعو کیا جائے گا۔

      First published: