ہوم » نیوز » عالمی منظر

عمران خان پر سابق خاتون ممبر اسمبلی نے کیا 5 ارب روپئےکے ہتک عزت کا مقدمہ

پاکستان تحریک انصاف سربراہ عمران خان کے خلاف ایک سابق خاتون ممبراسمبلی نے پانچ ارب روپئے کے ہتک عزت کا مقدمہ کیا ہے۔ دراصل اس سال سینیٹ کے دوران سابق ممبراسمبلی پر ان کی پارٹی نے روپئے لے کر فروخت ہونے کا الزام لگایا تھا۔

  • Share this:
عمران خان پر سابق خاتون ممبر اسمبلی نے کیا 5 ارب روپئےکے ہتک عزت کا مقدمہ
پاکستان کے وزیراعظم عمران خان: فائل فوٹو۔

پاکستان تحریک انصاف سربراہ عمران خان کے خلاف ایک سابق خاتون ممبراسمبلی نے پانچ ارب روپئے کے ہتک عزت کا مقدمہ کیا ہے۔ دراصل اس سال سینیٹ کے دوران سابق ممبراسمبلی پر ان کی پارٹی نے روپئے لے کر فروخت ہونے کا الزام لگایا تھا۔


ڈان اخبارکی  ہفتہ کی خبر کے مطابق خیر پختنخوا اسمبلی کی سابق رکن بی بی فوزیہ نے پیشاور ضلع اور سیشن عدالت میں جمعہ کو ہتک عزت کا ایک مقدمہ کیا۔ انہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ عمران خان کےقابل توہین بیانات نے ان کے سیاسی، سماجی اور خاندانی زندگی اور سماجی شخصیات کو برباد کردیا۔


قابل ذکر ہے کہ پارٹی صدر عمران خان نے الزام لگایا تھا کہ اسمبلی میں پارتی کے تقریباً 18 ممبران اسمبلی نے روپئے کے بدلے میں اپنے ووٹ بیچے تھے، جن لوگوں پر اپنے ووٹ بیچنے کا الزام لگا تھا ان میں پارٹی کی ممبراسمبلی فوزیہ بھی شامل ہیں۔ وہ خاتوناور چترال محفوظ سیٹ سے ممبر اسمبلی منتخب کی گئی تھیں۔


فوزیہ نے نقصان کے طور پر پارٹی سربراہ سے پاکستان میں ہونے والے 25 جولائی کے عام انتخابات سے قبل پانچ ارب روپئے کا معاوضہ مانگا ہے۔ بہر حال عدالتنے معاملے کی سماعت کے لئے 27 جون کی تاریخ طے کی ہے۔

فوزیہ نے عمران خان  الزام لگایا ہے کہ انہوں نے روپیوں کے لئے اپنا ووٹ بیچا۔ حالانکہ خان عمران خان ان کے خلاف الزامات کی جانچ کرانے اور اسے ثابت کرنےمیں ناکام رہے۔

 

 
First published: Jun 09, 2018 10:52 AM IST