உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    نوکری کے لئے انٹرویو دینے گئی حاملہ لڑکی کی ہوگئی موت، وجہ جان کر کانپ اٹھے گی روح!

    نوکری کے لئے انٹرویو دینے گئی حاملہ لڑکی کی ہوگئی موت

    نوکری کے لئے انٹرویو دینے گئی حاملہ لڑکی کی ہوگئی موت

    موت کس بہانے سے آئے کوئی نہیں جانتا۔ بیلا روس کے بوریسوو (Borisov, Belarus) شہر کی ایک فیکٹری میں کچھ ایسا ہوا کہ یقین کرنا مشکل ہے۔ یہاں 21 سال کی لڑکی فیکٹری میں نوکری کے لئے انٹرویو دینے گئی تھی۔ انٹرویو کے بعد فیکٹری کا ایک ملازم اسے فیکٹری دکھانے لے گیا۔

    • Share this:
      موت کس بہانے سے آئے کوئی نہیں جانتا۔ بیلا روس کے بوریسوو (Borisov, Belarus) شہر کی ایک فیکٹری میں کچھ ایسا ہوا کہ یقین کرنا مشکل ہے۔ یہاں 21 سال کی لڑکی فیکٹری میں نوکری کے لئے انٹرویو دینے گئی تھی۔ انٹرویو کے بعد فیکٹری کا ایک ملازم اسے فیکٹری دکھانے لے گیا۔ اس فیکٹری میں تار اور الیکٹروڈس (Welding wire and electrodes) جیسے پروڈکٹس تیار ہوتے ہیں۔ اس لڑکی کو وہ سمجھا رہا تھا کہ فیکٹری میں مشینیں کیسے کام کرتی ہیں اور پیداوار کس طریقے سے ہوتا ہے۔ اس دوران وہ ایک رجسٹر میں ریکارڈ لکھنے کے لئے رک گیا۔ پھر جیسے ہی یہ ملازم پیچھے مڑا، اس نے دیکھا کہ لڑکی خون سے لتھ پتھ ہوکر زمین پر پڑی ہوئی تھی۔

      دراصل، امیدا نظارووا (Umida Nazarova) نام کی اس لڑکی کے بال لمبے تھے۔ وہ فیکٹری کی ایک مشین کے بغل میں کھڑی تھی۔ اس دوران جیسے ہی وہ پیچھے مڑی، اس کے بال مشین کی چپیٹ (Hair got caught in a machine) میں آگئے۔ مشین میں بال کھنچنے سے اس کے گلے کے چاروں طرف (Hair Wrapped around her neck)  اپنے ہی بال پھانسی کے پھندے کی طرح لپٹ گئے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      Rani Chatterjee نے لال ڈریس میں لگایا گلیمر کا تڑکا، کہا- ’جب تم دیکھتے ہو تو میرا دل تھم جاتا ہے‘

      مشین میں پھنس گئے لمبے بال پھر ایسے ہوئی موت

      امیدا نظارووا (Umida Nazarova) کا گلا بری طرح پھنس گیا اور اسے سر میں شدید چوٹیں آئیں۔ فیکٹری کے ملازمین نے جلدی جلدی امیدا کو اسپتال پہنچایا۔ وہ بے ہوش ہوچکی تھی اور اسپتال میں داخل کرانے کے 20 دنوں بعد تک اسے ہوش نہیں آیا۔ آخر کار 20 دنوں تک زندگی کے لئے جدوجہد کرنے کے بعد اس کی موت ہوگئی۔ اس حادثہ کے بعد امیدا کے والد دمتری (Dmitry) نے فیکٹری کے ملازمین کی لاپرواہی کی وجہ سے اپنی بیٹی کی جان جانے کا الزام لگایا ہے۔ دمتری نے کہا کہ فیکٹری کے ملازمین کو پتہ تھا کہ اس کے بال لمبے ہیں تو مشین کے پاس جانے سے پہلے انہوں نے اس کے بال کور کیوں نہیں کرائے۔ دمتری نے کہا کہ فیکٹری والوں نے ایک نہیں بلکہ دو جانیں لی ہیں کیونکہ ان کی بیٹی 7 ہفتوں کی حاملہ تھی۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      بالی ووڈ-ہالی ووڈ اسٹارس سے کم نہیں ہیں بھوجپوری اداکارہ Neha Malik کی لگزری لائف، ہر دن کرتی ہیں انجوائے

      نوکری کے پہلے دن ہی ہوا جان لیوا حادثہ

      بیلا روس کی ایک عدالت نے اس معاملے میں سماعت کرتے ہوئے کہا ہے کہ فلانٹ ہیڈ کے ذریعہ اپنے کام کے تئیں لاپرواہی برتی گئی، جس کی وجہ سے امیدا کی جان چلی گئی۔ عدالت نے فلانٹ ہیڈ کو اس موت کا ذمہ دار مانتے ہوئے سزا سنائی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: