உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہند-پاک میں جنگ بندی کےمعاہدے پراتفاق رائے، جنگ بندی کی خلاف ورزی نہ کرنے کا فیصلہ

     ہندوستان اور پاکستان 2003 کے جنگ بندی معاہدے پرعمل کرنے کے لئے متفق ہو گئے ہیں اور دونوں نے یہ طے کیا ہے کہ مستقبل میں کسی بھی مسائل کو ہاٹ لائن اور فلیگ میٹنگ جیسے موجودہ میکانزم کے ذریعے حل کیا جائے گا۔

    ہندوستان اور پاکستان 2003 کے جنگ بندی معاہدے پرعمل کرنے کے لئے متفق ہو گئے ہیں اور دونوں نے یہ طے کیا ہے کہ مستقبل میں کسی بھی مسائل کو ہاٹ لائن اور فلیگ میٹنگ جیسے موجودہ میکانزم کے ذریعے حل کیا جائے گا۔

    ہندوستان اور پاکستان 2003 کے جنگ بندی معاہدے پرعمل کرنے کے لئے متفق ہو گئے ہیں اور دونوں نے یہ طے کیا ہے کہ مستقبل میں کسی بھی مسائل کو ہاٹ لائن اور فلیگ میٹنگ جیسے موجودہ میکانزم کے ذریعے حل کیا جائے گا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی:  ہندوستان اور پاکستان 2003 کے جنگ بندی معاہدے پرعمل کرنے کے لئے متفق ہو گئے ہیں اور دونوں نے یہ طے کیا ہے کہ مستقبل میں کسی بھی مسائل کو ہاٹ لائن اور فلیگ میٹنگ جیسے موجودہ میکانزم کے ذریعے حل کیا جائے گا۔

      ہندوستان کے فوجی آپریشن کے ڈائریکٹر جنرل لیفٹننٹ جنرل انل چوہان اور پاکستان کے فوجی آپریشن ڈائریکٹر جنرل نے آج شام ہاٹ لائن پر بات چیت کی جس کے دوران دونوں ممالک کے درمیان جنگ بندی معاہدے پر عمل کرنے پر اتفاق ہوا۔ یہ بھی اتفاق ہوا ہے کہ دونوں ہی طرف مستقبل میں جنگ بندی کی خلاف ورزی نہیں کریں گے۔
      ہندوستانی فوج کے مطابق یہ بات چیت پاکستان کے فوجی آپریشن ڈائریکٹر جنرل کی پہل پر شام 6 بجے ہوئی۔


      پاکستان کی جانب سے جنگ بندی معاہدے کی تجویز رکھی گئی جسے ہندوستان نے قبول  کرلیا۔ دونوں فریقوں نے طے کیا کہ کسی بھی مسائل کو ہاٹ لائن اور فلیگ میٹنگ جیسے بات چیت کے موجودہ ذرائع سے حل کیا جائے گا۔

      دونوں فوجوں کے ڈائریکٹر جنرل کے ساتھ بات چیت کے دوران جموں و کشمیر کی کنٹرول لائن اور بین الاقوامی سرحد پر موجودہ صورتحال کا جائزہ لیا۔ پاکستان کے فوجی آپریشنز کے ڈائریکٹر میجر جنرل ساحر شمشاد مرزا نے تجویز پیش کی کہ صورتحال کو بہتر بنانے اورامن برقرار رکھنے اور سرحدی علاقوں میں رہنے والے لوگوں کی مشکلات کو پیش نظر رکھنے کے لئے اقدامات کئے جانے چا ہئیں۔ لیفٹیننٹ جنرل چوہان نے اس پر اتفاق کیا۔
      دونوں مملکتوں کے حکام کے درمیان 22 مئی کو باقاعدہ بات چیت ہوئی تھی ۔ فوجی آپریشن کے ڈائریکٹر جنرل کے درمیان آخریبار بات چیت 27 اپریل کو ہوئی تھی۔
      قابل غور ہے کہ سرحد امن قائم رکھنے کے لئے پاکستان اور ہندوستان کے درمیان 2003 میں جنگ بندی کا معاہدہ ہوا تھا۔ طویل عرصہ تک پر اس پر عمل کیا گیا لیکن بعد میں پاکستان نے معاہدے کی خلاف ورزی کرکے فائرنگ شروع کی۔ ہندوستان نے ہمیشہ اس قسم کی کارروائی کاسخت جواب دیا تھا۔
      گزشتہ طویل عرصہ سے پاکستان کی طرف سے مسلسل جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے ۔ہندوستان نے اس کا سخت جواب دیکرکارروائی کی ہے ۔ اس سال اب تک پاکستان نے 1200 سے زائد بار جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے۔
      First published: