ہوم » نیوز » عالمی منظر

ہندسان۔چین سرحدی تنازعہ پر وزارت خارجہ کا بیان: دونوں ملک پرامن طریقے سے مسئلہ سلجھانے کو راضی

وزارت خارجہ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک پرامن طریقے سے اس مسئلے کو حل کرنے پر متفق ہوگئے ہیں۔ یہ بھی کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے مابین فوجی اور سفارتی سطح پر بات چیت جاری رہے گی۔

  • Share this:
ہندسان۔چین سرحدی تنازعہ پر وزارت خارجہ کا بیان: دونوں ملک پرامن طریقے سے مسئلہ سلجھانے کو راضی
دونوں ممالک کے مابین فوجی اور سفارتی سطح پر بات چیت جاری رہے گی۔

مشرقی لداخ میں ہندستان۔چین سرحد کے ساتھ پریل اے سی (LAC)کے پاس تنازعہ حل ہوتانظر آرہا ہے۔  ہندستان اور چین کے مابین فوجی سطح پر ہونے والی بات چیت مثبت رہی۔ وزارت خارجہ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک پرامن طریقے سے اس مسئلے کو حل کرنے پر متفق ہوگئے ہیں۔ یہ بھی کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے مابین فوجی اور سفارتی سطح پر بات چیت جاری رہے گی۔


بات چیت سے حل ہوگا تنازعہ


وزارت خارجہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے مابین بات چیت ایک اچھے ماحول میں ہوئی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے ، "دونوں ممالک متعدد دو طرفہ معاہدوں کے تحت سرحدی صورتحال کو پرسکون کرنے کی کوشش کریں گے۔ باہمی تعلقات اور سرحدی علاقوں کی ترقی کے لئے امن ضروری ہے۔ اس مسئلے کے حل اور سرحدی علاقوں میں امن کو یقینی بنانے کے لئے دونوں فریق مزید بات چیت جاری رکھیں گے۔ دونوں فریقوں نے یہ بھی کہا کہ اس سال دونوں ممالک کے مابین سفارتی تعلقات کے قیام کی 70 ویں سالگرہ ہے۔ ایسی صورتحال میں  اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ تعلقات کو مضبوط کرنے کے لئے مزید مذاکرات جاری رکھیں گے۔


سنیچر کو ہوئی تھی میٹنگ
بتادیں کہ دونوں ممالک کے عہدیداروں کی سنیچر کو میٹنگ ہوئی۔ اس دوران ہندوستان اور چین کے ملٹری کمانڈروں کے مابین تقریبا 5 گھنٹے تک بات چیت ہوئی۔ ہندوستانی وفد کی قیادت لیہ میں 14 ویں کور کے جنرل آفیسر کمانڈنگ لیفٹیننٹ جنرل ہریندر سنگھ کر رہے تھے جبکہ چینی فریق کی قیادت تبت ملٹری ڈسٹرکٹ کمانڈر کر رہے تھے۔

First published: Jun 07, 2020 11:32 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading