உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شنگھائی کارپوریشن کی میٹنگ میں ہندوستان کی چین کو دو ٹوک، ایل اے سی پر یکطرفہ تبدیلی قبول نہیں

    شنگھائی کارپوریشن کی میٹنگ میں ہندوستان کی چین کو دو ٹوک، ایل اے سی پر یکطرفہ تبدلیلی قبول نہیں

    اس میٹنگ میں ہندوستان نے چین کو دو ٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ دو طرفہ تعلقات میں اضافہ کے لئے سرحد پر امن اور خوشحالی کی بحالی ضروری ہے۔ ہندوستان نے واضح کیا کہ یکطرفہ تبدیلی قبول نہیں کی جائے گی۔ میٹنگ کے دوران سینئر کمانڈرس سطح پر بات چیت کے لئے رضا مندی بنی ہے۔

    • Share this:
    دوشانبے: وزیر خارجہ ایس جے شنکر اور چینی وزیر خارجہ وانگ یی نے بدھ کے روز یہاں مشرقی لداخ میں لائن آف ایکچول کنٹرول (ایل اے سی) کی موجودہ صورت حال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔ وزارت خارجہ کے مطابق، یہ ملاقات تاجکستان کے دارالحکومت میں شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) کے وزرائے خارجہ کے اجلاس کے موقع پر ہوئی، جس میں دونوں وزراء نے مشرقی لداخ میں ایل اے سی کی موجودہ صورتحال اور مجموعی طور پر ہندوستان - چین تعلقات سے متعلق امور پر تفصیل سے تبادلہ خیال کیا۔
    دونوں فریقوں نے ماسکو میں ستمبر 2020 میں ان کے مابین میٹنگ میں طے پانے والے معاہدے پر سنجیدگی سے عمل درآمد کرنے پر زور دیا تاکہ دونوں فریقوں کی افواج کو جلد از جلد پیچھے ہٹایا جاسکے اور زیر التواء معاملات حل ہوسکیں۔
    ڈاکٹر جے شنکر نے کہا کہ پیگانگ جھیل کے آس پاس فورسز کے کامیاب انخلا کے بعد ، باقی مسائل کو حل کرنے کے لئے ایک سازگار ماحول پیدا کیا گیا۔ ہماری توقع یہ تھی کہ چینی فریق اس سمت ہمارے ساتھ کام کرے گا ، لیکن دوسرے علاقوں کی صورتحال غیر حل طلب ہے۔
    انہوں نے یہ بھی کہا کہ دونوں ممالک مانتے ہیں کہ ایل اے سی پر طویل عرصے تک ایسی صورتحال جاری رکھنا کسی کے مفاد میں نہیں ہے۔ اس سے دونوں ممالک کے باہمی تعلقات متاثر ہورہے ہیں۔ ایل اے سی پر یکطرفہ تبدیلی کی کوشش سے ہمارے تعلقات بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔ ہمارے دونوں ممالک کے مفاد میں ہے کہ تمام باہمی معاہدوں اور پروٹوکول کی تعمیل کرتے ہوئے تمام زیر التواء معاملات کو تیزی سے حل کریں۔
    دونوں وزراء نے 25 جون کو سرحد پر رابطہ کاری اور تعاون کے ورکنگ طریقہ کار سے متعلق اجلاس کے بعد جلد از جلد ملٹری کور کمانڈر سطح کا اگلا اجلاس بلانے کی ضرورت کا اظہار کیا۔ دونوں فریقوں نے اتفاق کیا کہ دونوں فریقوں کو زمین پر استحکام برقرار رکھنا چاہئے اور کسی بھی فریق کو یکطرفہ قدم نہیں اٹھانا چاہئے جس سے تناؤ میں اضافہ ہو۔

    نیوز ایجنسی یو این آئی اردو کے اِن پُٹ کے ساتھ۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: