ہوم » نیوز » عالمی منظر

ہندوستان نے مسترد کردی پاکستان کی تجویز، کلبھوشن جادھوکوبلا شرط سفارتی رسائی مہیا کرائی جائے

پاکستان کی ان شرائط کے بعد یہ واضح ہوگیا ہے کہ ہندوستانی افسران اورجادھو کے درمیان ہونے والی ملاقات کے دوران وہ آپس میں کیا بات چیت کرتے ہیں، وہ سب پاکستان کے اعلیٰ افسران سنیں گے۔

  • Share this:
ہندوستان نے مسترد کردی پاکستان کی تجویز، کلبھوشن جادھوکوبلا شرط سفارتی رسائی مہیا کرائی جائے
کلبھوشن جادھو: فائل فوٹو

ہندوستان نے پاکستان کے ان شرائط کو مسترد کردیا ہے جس کے تحت کلبھوشن جادھوکو کانسولرایکسیز دی جانی تھی۔ پاکستان نے کل کلبھوشن جادھو کو بلا شرط سفارتی رسائی مہیا کرانےکی بات کہی تھی، لیکن اس کے لئےاس نے تین شرائط رکھ دی تھی۔ اب ہندوستان نےان شرائط کوماننےسے واضح طورپرانکارکردیا ہے۔


ہندوستانی حکومت نے پاکستان سے وہاں کی جیل میں بند ہندوستانی شہری کلبھوشن جادھوکو ’بلارخنہ اورخوف سے پاک‘ سفارتی رسائی مہیا کرانے کےلئےکہا ہے۔ حکومت نے جمعرات کوپاکستان سےکہا کہ وہ بین الاقوامی عدالت کےفیصلوں کےمطابق کلبھوشن جادھوکوخوف سےپاک ماحول میں ہندستانی سفارتکاروں سے ملاقات کرنےکی سہولت مہیا کرائے۔ ذرائع کےمطابق پاکستان نے حکومت کےاس موقف پرابھی کوئی ردعمل نہیں دیا ہے۔


واضح رہے کہ پاکستان نے 18 جولائی کواعلان کیا تھا کہ بین الاقوامی عدالت کےفیصلے کے بعد کلبھوشن جادھو کوویانا معاہدہ کےآرٹیکل 36کے پیرا (بی) کے مطابق اس کے حقوق سے واقف کرا دیا گیا ہے۔ پاکستان کی وزارت خارجہ کے ترجمان محمد فیصل نےجمعرات کو کہا کہ ہم نےپاکستان میں ہندستان کےسفیرکوکلبھوشن جادھوکواس جمعہ کوسفارتی رسائی مہیا کرانےکی تجویزدی ہے۔ اس کے بعد وزارت خارجہ کےترجمان رویش کمارنےکہا کہ ہمیں پاکستان کی طرف سے ایک تجویزملی ہے۔ ہم بین الاقوامی عدالت کے فیصلے کے مطابق اس تجویزپرغور کررہے ہیں۔ ہم سفارتی چینل کے ذریعہ پاکستان کو جواب دیں گے۔


پہلی شرط: پاکستان کا کہنا ہےکہ جس کمرے میں کلبھوشن جادھواورہندوستانی افسران کی ملاقات ہوگی وہاں ایک پاکستانی افسربھی موجود رہےگا۔

دوسری شرط : جس کمرے میں ملاقات ہوگی وہاں سی سی ٹی وی لگےہوں گے۔ پاکستان نے کہا ہے کہ کمرے میں ہورہی بات چیت کو بھی ریکارڈ کیا جائے گا۔

تیسری شرط: پاکستان نے یہ بھی شرط رکھی ہے کہ ہندوستان کی طرف سے صرف ایک ہی افسرکو ملاقات کی اجازت ملے گی۔

پاکستان کی ان شرطوں سے یہ واضح ہوگیا ہے کہ ہندوستانی افسران اورکلبھوشن جادھوکے درمیان ہونے والی ملاقات کے دوران کہ وہ آپس میں کیا بات چیت کرتے ہیں، وہ سب پاکستان کے اعلیٰ افسران سنیں گے۔ پاکستان کا کہنا ہے کہ اس کے قدم عالمی معیاراور ہندوستانی قوانین کے مطابق صحیح ہیں۔

گزشتہ ماہ بین الاقوامی عدالت نے کہا تھا کہ کلبھوشن جادھو کی موت کی سزا پرروک برقرار رہے گی۔ آئی سی جے نے کہا تھا کہ پاکستان کی فوجی عدالت میں انہیں قصوروارٹھہرانے اورانہیں دی گئی سزاپرازسرنوغورکرنے کی ضرورت ہے۔ ساتھ ہی عدالت نے جادھوکو بغیرکسی تاخیرکے سفارتی رسائی مہیا کرانے کا حکم بھی دیا تھا۔ اپنے 42 صفحات کے فیصلے میں آئی سی جے نے فیصلہ سنایا تھا کہ پاکستان نے سفارتی تعلقات پروینا کنوینشن کوتوڑا، جوممالک کوان کے شہریوں کوبیرون ملک میں گرفتارکئے جانے پرسفارتی رسائی کے حقوق فراہم کرتا ہے۔
First published: Aug 02, 2019 06:32 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading