ہوم » نیوز » عالمی منظر

ہند نژاد طالب علم نے گوگل سے تیز سرچ انجن بنایا

کناڈا میں مقیم ہند نژاد 16 سالہ طالب علم انمول ترکیل نے ایک نیا سرچ انجن بنایا ہے ۔

  • Share this:
ہند نژاد طالب علم نے گوگل سے تیز سرچ انجن بنایا
کناڈا میں مقیم ہند نژاد 16 سالہ طالب علم انمول ترکیل نے ایک نیا سرچ انجن بنایا ہے ۔

واشنگٹن۔ کناڈا میں مقیم ہند نژاد 16 سالہ طالب علم انمول ترکیل نے ایک نیا سرچ انجن بنایا ہے ۔ اس کا دعوی ہے کہ یہ انجن گوگل سے زیادہ تیز ہے۔

انمول نے اس انجن کی کارکردگی انٹرنیٹ سرچ انجن گوگل کی جانب سے منعقدہ ایک سائنس میلے میں کیا ہے۔ اس ہونہار طالب علم کا دعوی ہے کہ اس کا یہ انجن گوگل کے مقابلے 47 فیصد زیادہ تیز ہے۔ انمول کے مطابق اس نے یہ انجن اپنی 10 ویں درجہ کے ایک پروجیکٹ کے لئے تیار کیا تھا اور بعد میں اس نے اس پروجیکٹ کی نمائش گوگل کے سائنس میلے میں کی۔

واضح رہے کہ گوگل کے اس میلے کا انعقاد آن لائن ہوتا ہے جس میں 13 سے 18 سال تک کے بچے شرکت کرسکتے ہیں۔

First published: Aug 24, 2015 02:58 PM IST