உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہندوستانی طلبا کو پاکستان میں میڈیکل کی تعلیم حاصل نہیں کرنے کا مشورہ، NMC نے جاری کیا نوٹس

    ہندوستانی طلبا کو پاکستان میں میڈیکل کی تعلیم حاصل نہیں کرنے کا مشورہ

    ہندوستانی طلبا کو پاکستان میں میڈیکل کی تعلیم حاصل نہیں کرنے کا مشورہ

    Indian Students Pakistan Medical Degree: 29 اپریل کو جاری نوٹس میں کہا گیا ہے کہ ’سبھی متعلقہ لوگوں کو مشورہ دیا جاتا ہے کہ وہ میڈیکل تعلیم کے لئے پاکستان کا سفر نہ کریں‘۔

    • Share this:
      نئی دہلی: قومی طبی کمیشن (این ایم سی) نے ہندوستانی طلبا کو پاکستان کے میڈیکل کالجوں میں داخلہ نہیں لینے کا مشورہ دیا ہے۔ یونیورسٹی گرانٹ کمیشن (یوجی سی) اور آل انڈیا کونسل فار ٹیکنیکل ایجوکیشن (اے آئی سی ٹی ای) نے کچھ دن پہلے مشترکہ تبادلہ خیال سے ہندوستانی طلبا سے پاکستان میں کسی بھی کالج یا تعلیمی اداروں میں خود کو نامزد نہیں کرنے کی گزارش کی تھی، جس کے بعد این ایم سی کے ذریعہ عوامی نوٹس جاری کیا گیا ہے۔

      یوجی سی اور اے آئی سی ٹی ای کی مشاورت میں کہا گیا تھا کہ اگر طلبا ایسا کرنے میں ناکام رہے تو وہ اس ملک میں نوکری تلاش کرنے یا اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے اہل نہیں ہوں گے۔ گزشتہ 29 اپریل کو جاری نوٹس میں کہا گیا ہے کہ ’سبھی متعلقہ لوگوں کو مشورہ دیا جاتا ہے کہ وہ طبی تعلیم کے لئے پاکستان کا سفر نہ کریں۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      چینی کمپنی Xiaomi کو جھٹکا، ED نے ضبط کی 5 ہزار کروڑ سے زیادہ کی جائیداد

      نوٹس میں کہا گیا ہے، ’ہندوستان کا کوئی بھی شہری/بیرون ملک کے شہری جو پاکستان کے کسی بھی میڈیکل کالج میں ایم بی بی ایس/بی ڈی ایس یا مساوی میڈیکل نصاب میں داخلہ لینا چاہتا ہے، وہ ایف ایم جی ای میں موجود ہونے یا ہندوستان میں روزگار پانے کے اہل نہیں ہوں گے، سوائے ان لوگوں کے جنہوں نے دسمبر 2018 سے پہلے یا بعد میں وزارت داخلہ سے سیکورٹی منظوری حاصل کرنے کے بعد پاکستان کے ڈگری کالجوں/اداروں میں داخلہ لیا تھا۔

      فارن میڈیکل گریجویٹ ایگزامینیشن (FMGE) اور نیشنل ایگزٹ ٹیسٹ (NEXT) طلباء کے لئے ہندوستان میں پریکٹس کرنے کے لئے ایک لائسنسنگ امتحان ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: