உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Instagram Down:ہزاروں یوزرس کے لئے ڈاؤن ہوا انسٹاگرام

    انسٹاگرام ہوا ڈاون تو یوزرس کو ہوئی کافی پریشانی۔

    انسٹاگرام ہوا ڈاون تو یوزرس کو ہوئی کافی پریشانی۔

    Instagram Down: میٹا پلیٹ فارمس اِنک کا امیج شیئرنگ پلیٹ فارم Instagram جمعرات کو ہزاروں صارفین کے لیے ڈاون ہوگیا تھا، آؤٹیج ٹریکنگ ویب سائٹ Downdetector.com کے مطابق۔ 6,000 سے زیادہ صارفین نے انسٹاگرام ڈاؤن ڈیٹیکٹر کے ڈاؤن ہونے کی اطلاع دی۔

    • Share this:
      Instagram Down:نئی دہلی:میٹا پلیٹ فارمس اِنک کا امیج شیئرنگ پلیٹ فارم Instagram جمعرات کو ہزاروں صارفین کے لیے ڈاون ہوگیا تھا، آؤٹیج ٹریکنگ ویب سائٹ Downdetector.com کے مطابق۔ 6,000 سے زیادہ صارفین نے انسٹاگرام ڈاؤن ڈیٹیکٹر کے ڈاؤن ہونے کی اطلاع دی۔ DownDetector صارف کی رپورٹس کو اپنے پلیٹ فارم پر اسٹور کرکے بندشوں کا پتہ لگاتا ہے۔ بندش صارفین کی ایک بڑی تعداد کو متاثر کرتی ہے۔

      اس سے پہلے 4اکتوبر 2021 کو بھی نہ صرف انسٹاگرام بلکہ فیس بک، وہاٹس ایپ بھی پوری دنیا میں ڈاون ہوگئے تھے جس سے یوزرس کو کافی پریشانی کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

      سوشل میڈیا سائٹس فیس بک ، انسٹاگرام اور وہاٹس ایپ کی سروس عالمی سطح پر کئی گھنٹوں سے ڈاون ہونے کے بعد یوزرس نے ٹویٹ کرکے اپنی اپنی پریشانیوں کا اظہار کیا تھا۔ وہیں فیس بک نے ٹوئٹ کرکے کہا تھا کہ ہم جانتے ہیں کچھ لوگوں کو ہمارے ایپس اور مصنوعات تک پہنچنے میں پریشانی ہورہی ہے۔ ہم اسے جلد از جلد معمول پر لانے کیلئے کام کررہے ہیں اور کسی بھی طرح کی تکلیف کے لئے معذرت خواہ ہیں۔

      وہیں وہاٹس ایپ نے اپنے سرکاری ٹوئٹر اکاونٹ پر کہا تھا کہ ہم جانتے ہیں کہ کچھ لوگ اس وقت وہاٹس ایپ پر مسائل کاسامنا کررہے ہیں۔ ہم اسے معمول پر لانے کے لئے کام کررہے ہیں اور جلد از جلد معلومات کو اپ ڈیٹ کریں گے۔ آپ کے صبر کے لئے شکریہ۔

      یہ بھی پڑھیں:
      پاکستان کا نیا حربہ، ہندوستان کی جاسوسی کے لئے تیار کی خوبصورت لڑکیوں کی ’پلٹن‘

      یہ بھی پڑھیں:
      60 کی عمر میں 30 سال کی نظر آتی ہیں یہ دادی! Fitnessدیکھ کر ہم عمر کے لوگ رہ جاتے ہیں دنگ
      ادھرانسٹا گرام نے کہاتھا کہ انسٹا گرام کے دوستوں ابھی ہم تھوڑے مشکل وقت سے گزر رہے ہیں اور آپ ان کا استعمال کرنے میں پریشانی ہوسکتی ہے۔ ہمارے ساتھ رہیں ہم اس پر کام کررہے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: