உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    قاسم سلیمانی کے بعد ایران نے جنرل اسماعیل قانی کو بنایا قدس فورس کا نیا کمانڈر ، امریکہ کو دی یہ بڑی وارننگ

    اسماعیل قانی کی فائل فوٹو ۔ تصویر : ٹویٹر ایٹ ایران وائر انگلش

    اسماعیل قانی کی فائل فوٹو ۔ تصویر : ٹویٹر ایٹ ایران وائر انگلش

    امریکی حملہ کے بعد ایرانی حکومت کے ترجمان علی ربیعی نے سرکاری ٹیلی ویژن پر کہا کہ امریکہ نے آخری لائن بھی عبور کردی ہے اور مستقبل قریب میں ہم مناسب وقت پر اس کا فیصلہ کن جوابدیں گے۔

    • Share this:
      پاسداران انقلاب کی قدس فورس کے سربراہ میجر جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے بعد ایران نے اسماعیل قانی کو اس فورس کا نیا سربراہ مقرر کیا ہے ۔ آیت اللہ خامنہ ای نے اس کا اعلان اپنی ویب سائٹ پر جاری کئے گئے ایک بیان میں کیا ۔ اس بیان میں ایران کے سب سے بڑے لیڈر خامنہ ای نے قانی کو 1980-88 کے ایران – عراق جنگ کا سب سے اہم کمانڈر بتایا ہے ۔ خیال رہے کہ جمعہ کو عراق کے بغداد میں امریکی حملے میں قاسم سلیمانی کی موت پر ایران نے شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے اور امریکہ کو سنگین نتائج بھگتنے کی وارننگ دی ہے ۔

      امریکی حملہ کے بعد ایرانی حکومت کے ترجمان علی ربیعی نے سرکاری ٹیلی ویژن پر کہا کہ امریکہ نے آخری لائن بھی عبور کردی ہے اور مستقبل قریب میں ہم مناسب وقت پر اس کا فیصلہ کن جوابدیں گے۔ جبکہ  ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ نے امریکہ کے عراق میں راکٹ حملے پر سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مجرموں سے اس کا بدلہ ضروری لیا جائے گا۔ مسٹر خامنہ ای نے کہا کہ سلیمانی کی شہادت کے باوجود خدا کے کرم سے ان کا کام اور ان کے دکھائے ہوئے راستے بند نہیں ہوں گے۔ جن گنہگاروں نے اپنے گندے ہاتھ ان کے اور دیگر شہیدوں کے خون سے رنگے ہیں ، ان سے ہم ہر حال میں بدلہ لے کر رہیں گے۔ شہادت اتنےبرسوں تک ان کے ذریعہ مسلسل کئے گئے کاموں کا انعام ہے۔

      علاوہ ازیں ایران کے وزیر خارجہ محمد جاوید ظریف نے امریکہ کو سنگین نتائج کی دھمکی دی ہے۔ جواد ظریف نے ٹوئٹ کیا کہ امریکہ کے ذریعہ آئی ایس آئی ایس، النصرہ اور القاعدہ جیسے دہشت گرد گروپ سے سب سے زیاد موثر طریقہ سے لڑنے والے جنرل قاسم سلیمانی کو نشانہ بنانا اور ان کا قتل کرنا بے حد خطرناک ہے اور بے وقوفی کی حرکت ہے۔ امریکہ کے اس اقدام کےانجام کی ذمہ داری اس کی خود ہوگی۔

      ہندستان نے کی صبروتحمل سے کام لینے کی اپیل

      ہندستان نے قاسم سلیمانی کے قتل کے بعد محتاط ردعمل ظاہر کرتے ہوئے سبھی فریقوں سے صبروتحمل سے کام لینے کی اپیل کی ہے ۔ ہندوستانی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ ہمارے نوٹس میں امریکہ کے ذریعہ ایک سینئر ایرانی کمانڈر کے مارے جانے کا واقعہ سامنے آیاہے ۔ اس کشیدگی نے پوری دنیا کو تشویش میں مبتلا کر دیا ہے ۔ ہندستان کے لیے اس خطہ میں امن واستحکام اور سلامتی انتہائی اہم ہے ۔ یہ انتہائی ضروری ہے کہ حالات مزید خراب نہ ہوں ۔ ہندستان مسلسل صبروتحمل سے کام لینے کی اپیل کرتا رہا ہے اور کرتارہے گا۔

      واضح رہے کہ بغداد کے بین الاقوامی ایئرپورٹ کے پاس جعہ کو راکٹ سے حملہ کیاگیا۔ بعد میں ایک امریکی افسر نے بتایا کہ یہ حملہ امریکہ نے کیاتھا۔ حملہ میں ایران کے پاسداران انقلاب کی قدس فورس کے کمانڈر میجر جنرل قاسم سلیمانی اور ایران حامی شیعہ تنظیم حشد الشعبی کے نائب سربراہ ابومہدی المہندس سمیت سات افراد ہلاک ہوگئے ۔

      نیوز ایجنسی یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ 
      First published: